میانمار کی رہنما کا نوبل امن ایوارڈ واپس نہیں لیا جا سکتا، نوبل امن کمیٹی

"نوبل کمیٹی  ایوارڈ  یافتہ افراد کو اسوقت تک کے کاموں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اس ایوارڈ کا حقدار ٹہراتی ہے

میانمار کی رہنما کا نوبل امن ایوارڈ واپس نہیں لیا جا سکتا، نوبل امن کمیٹی

نوبل امن ایوارڈ کمیٹی   نے اطلاع دی ہے کہ وہ میانمار کی  وزیر خارجہ اورصدارتی امور کی وزیر مملکت  آونگ سان سو چی  کو سن 1991 میں عطا کردہ امن ایوارڈ  واپس  نہیں  لے گی۔

سویڈش  سرکاری ٹیلی ویژن  کی خبر کے مطابق نوبل امن ایوار ڈ کی کمیٹی کے ترجمان  نے میانمار میں  پر تشدد واقعات اور قتل عام کے بعد سو چی سے امن ایوارڈ کے اعزاز کو واپس لیے  جانے  کے مطالبات پر  جواب دیتے ہوئے کہا کہ"نوبل انجمن  کے قواعد و ضوابط کے مطابق  نوبل امن ایوارڈ کو منسوخ کرنا نا ممکن ہے۔ "

خبر میں  اس حوالے سے تین لاکھ افراد کے دستخط پر مبنی ایک مہم    چلائی جانے کا حوالہ دیتے ہوئے   ترجمان کے ان بیانات کو جگہ دی  گئی ہے:"نوبل کمیٹی  ایوارڈ  یافتہ افراد کو اسوقت تک کے کاموں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اس ایوارڈ کا حقدار ٹہراتی ہے اور یہ اس کے بعد  کی پیش رفت کے حوالے سے تبصرہ کرنے سے قاصر ہے۔

 



متعللقہ خبریں