روس کےیوکرین پر حملے جاری ہیں

ایگور کوناشینکوف نے روس یوکرین جنگ میں روسی فوجی دستوں کی سرگرمیوں کے بارے میں بیان دیا۔ کوناشینکوف نے کہا کہ  حملے کے مقاصد حاصل کر لیے گئے اور تمام پرعزم عناصر کو نشانہ بنایا گیا

1910863
روس کےیوکرین پر حملے جاری ہیں

روسی وزارت دفاع کے ترجمان ایگور کوناشینکوف نے کہا کہ انہوں نے گزشتہ روز یوکرین کے ملٹری مینجمنٹ اور توانائی کے نظام پر طویل فاصلے تک مار کرنے والے اور صحیح نشانے والے  ہتھیار وں سے حملہ کیا۔

ایگور کوناشینکوف نے روس یوکرین جنگ میں روسی فوجی دستوں کی سرگرمیوں کے بارے میں بیان دیا۔

انہوں نے کہا کہ  انہوں نے یوکرین کے خلاف میزائل حملے کیےہیں۔ روسی مسلح افواج نے، 23 نومبر کو، ہم نے یوکرین کے ملٹری مینجمنٹ سسٹمز اور ان سسٹمز سے متعلق توانائی کے بنیادی ڈھانچے کے عناصر پر ہوا، سمندر اور زمین سے طویل فاصلے تک مار کرنے والے اعلیٰ درستگی والے ہتھیاروں سے بڑے پیمانے پر حملہ کیا۔

کوناشینکوف نے کہا کہ  حملے کے مقاصد حاصل کر لیے گئے اور تمام پرعزم عناصر کو نشانہ بنایا گیا،حملے کے نتیجے میں، غیر ملکی ہتھیاروں، فوجی سازوسامان اور گولہ بارود کی کھیپ ان علاقوں میں جہاں تنازعات جاری ہیں، یوکرین کی مسلح افواج کی ٹرینوں کے ذریعے روک دیا گیا  ہے۔

ایگور کوناشینکوف نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے یوکرین کے دارالحکومت کیف میں اہداف کے خلاف حملے نہیں کیے تھے۔

انہوں نے کہا کہ  کوپیانسک، کراسنی لیمان اور ڈونیٹسک کے جنوب میں یوکرینی افواج کے حملوں کو پسپا کر دیا گیا، کوناشینکوف نے دعویٰ کیا کہ یہاں ہونے والی جھڑپوں میں 120 سے زائد یوکرینی فوجیوں کو  غیر فعال کر دیا گیا اور بڑی تعداد میں فوجی سازوسامان کو تباہ کر دیا گیا۔

روسی ترجمان نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران یوکرئنی فوج کی 4 ڈرانز  کو  مار گرایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ "آج تک، یوکرین کے پاس 333 طیارے، 177 ہیلی کاپٹر، 2،558 بغیر پائلٹ کے فضائی گاڑیاں، 390 فضائی دفاعی میزائل سسٹم، 6،791 ٹینک اور بکتر بند گاڑیاں، 902 ملٹی بیرل راکٹ لانچر، 3616 ہووٹزر اور 7 نجی مارٹر گاڑیاں، 34 تباہ کر دی گئی ہیں۔



متعللقہ خبریں