یوکرین کے 959 فوجی اہل کاروں نے ہتھیار ڈال دیے: روس کا دعویٰ

بدھ کو روسی وزارتِ دفاع کے ترجمان نے صحافیوں کو بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں یوکرین کے 694 فوجی اہل کاروں نے خود کو روس کے حوالے کیا ہے

1829308
یوکرین کے 959 فوجی اہل کاروں نے ہتھیار ڈال دیے: روس کا دعویٰ

روس کی وزارتِ دفاع نے دعویٰ کیا ہے ماریوپول میں یوکرین کے 959 فوجی اہل کاروں نے ہتھیار ڈال دیے ہیں۔

بدھ کو روسی وزارتِ دفاع کے ترجمان نے صحافیوں کو بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں یوکرین کے 694 فوجی اہل کاروں نے خود کو روس کے حوالے کیا ہے۔

یوکرینی حکام نے تاحال ہتھیار ڈالنے والے فوجیوں کی تعداد کے بارے میں تصدیق نہیں کی ۔ قبل ازیں یوکرین کی نائب وزیرِ دفاع اینا مالیار نے پیر کو بتایا تھا کہ ماریوپول کے اسٹیل پلانٹ میں محصور 260 جنگ فوجیوں نے ہتھیار ڈال دیے ہیں اور خود کو روسی افواج کے حوالے کر دیا ہے۔

روس اسے بڑے پیمانے پر ہتھیار ڈالنے کی کارروائی قرار دے رہا ہے جب کہ یوکرین کا موقف ہے کہ اس کے اہل کاروں نے اپنا مشن پورا کرلیا تھا۔

ماریوپول کے میئر ویدیم بوائےچینکو نے وی او اے کی یوکرینی سروس کو بتایا ہے کہ سورماؤں کی طرح مقابلے کرنے والے ہمارے فوجیوں کا مقصد ماریوپول پر دشمن کا براہ راست حملہ روکنا تھا۔

انہوں نے کہا کہ روس کا مقابلہ کرنے والے جنگجوؤں کی مزاحمت کی وجہ سے یوکرینی فورسز کو دیگر شہروں کے دفاع کی مزید تیاری کا وقت ملا ہے۔

خبر رساں ادارے 'ایسوسی ایٹڈ پریس' کے مطابق کئی ماہ تک اسٹیل پلانٹ کا دفاع کرنے والے فوجیوں کو یوکرین نے اپنی جان بچانے کے احکامات دیے تھے جس کے بعد انہوں نے خود کو روس کے حوالے کیا۔

 



متعللقہ خبریں