روس ۔ یوکیرین جنگ کی تازہ صورتحال پر رپورٹ

روس نے دارالحکومت کیف کے قریب واسلکیو میں فوجی ہوائی اڈے کے علاقے پر کم از کم 6 میزائل داغے ہیں۔

1794328
روس ۔ یوکیرین جنگ کی تازہ صورتحال پر رپورٹ
ukrayna siviller tahliye.jpg

یوکرین کے وزیر خارجہ دیمترو کولیبا نے کہا کہ ماریوپول شہر پر روسی فوج کے حملوں میں 12 دنوں میں 1582 شہری اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

کولیبا نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر یوکرین کے ماریوپول کی صورتحال کے بارے میں معلومات شیئر کیں۔

کولیبا نے بتایا کہ روسی فوجی یونٹوں نے شہر کو گھیرے میں لے لیا اور وہاں کے شہریوں پر بمباری کی۔"محصور ماریوپول اس وقت کرہ ارض پر بدترین انسانی تباہی کا سامنا کر رہا ہے۔ 12 دنوں میں 1582 افراد ہلاک ہوئے۔ ہلاک ہونے والو کو اجتماعی قبروں میں دفن کیا گیا ہے۔"

یہ نوٹ کرتے ہوئے کہ روس نے بھی اس شہر میں انسانی امداد کو روکا، کولیبا نے نوٹ کیا کہ انہیں اسے روکنے کے لیے طیاروں کی ضرورت ہے۔

یہ بھی اعلان کیا گیا کہ روس نے دارالحکومت کیف کے قریب واسلکیو میں فوجی ہوائی اڈے کے علاقے پر کم از کم 6 میزائل داغے ہیں۔

حملے کے نتیجے میں علاقے میں تیل کے ڈپو میں آگ لگ گئی، گولہ بارود کے ڈپو میں دھماکے ہوئے۔

یوکرین کی نائب وزیر اعظم ارینا ویریشوک نے اعلان کیا کہ انہوں نے کیف اور سومی علاقوں میں 10 سے زیادہ بستیوں میں، خاص طور پر ماریوپول اور پولوگی کے شہروں میں، شہریوں کے انخلاء کے لیے انسانی امداد کی راہداری کھول دی ہے۔

ویرشوک نے واضح کیا کہ اگرچہ روسی فوجیوں نے کل انسانی امداد کی راہداریوں کو روک دیا تھا، لیکن وہ Energodar، بوچا، گوستومیل اور کوزاروچی سے 7,144 شہریوں کو نکالنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

روسی وزارت دفاع نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ یوکرین میں کل 3,346 فوجی بنیادی ڈھانچوں کو تباہ کیا گیا ہے۔

وزارت کے ترجمان ایگور کوناشینکوف نے کہا کہ روسی مسلح افواج اور دونباس میں نام نہاد علیحدگی پسند انتظامیہ یوکرین میں پیش قدمی جاری رکھے ہوئے ہیں اور یہاں کی کچھ بستیاں کنٹرول میں ہیں۔



متعللقہ خبریں