ہم افغانستان میں متعین برطانوی فوجیوں کے منظّم انخلاء کے ساتھ تعاون کرتے ہیں: راب

زیادہ کامیاب مستقبل کے مالک اور مستحکم افغانستان کے ساتھ تعاون کے لئے برطانیہ، نیٹو اور افغان عوام کے ساتھ ہے: وزیر خارجہ ڈومینک راب

1621725
ہم افغانستان میں متعین برطانوی فوجیوں کے منظّم انخلاء کے ساتھ تعاون کرتے ہیں: راب

برطانیہ کے وزیر خارجہ ڈومینک راب نے کہا ہے کہ ہم افغانستان میں متعین برطانوی فوجیوں کے ملک سے منظّم انخلاء کے ساتھ تعاون کرتے ہیں۔

ٹویٹر سے جاری کردہ بیان میں راب نے کہا ہے کہ زیادہ کامیاب مستقبل کے مالک اور مستحکم افغانستان کے ساتھ تعاون کے لئے برطانیہ، نیٹو اور افغان عوام کے ساتھ ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ہم ملک میں موجود برطانوی یونٹوں کے منّظم انخلاء کی حمایت کریں گے۔

برطانیہ کے وزیر دفاع بین والز نے بھی جاری کردہ تحریری بیان میں کہا ہے کہ افغانستان کے عوام ایک پُر امن اور مستحکم مستقبل کا حق رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ انخلاء کے دوران افغانستان میں خدمات سرانجام دینے والےبرطانوی فوجیوں کی سلامتی ہماری ترجیح ہے۔ اتحادی ممالک پر حملے کا بھر پور جواب دینے کے معاملے میں بھی ہمارا موقف دو ٹوک ہے۔

واضح رہے کہ امریکہ کے صدر جو بائڈن نےجاری کردہ بیان میں کہا تھا کہ  یکم مئی کو افغانستان سے فوجیوں کی مکمل واپسی شروع کر دی جائے گی اور یہ انخلاء 11 ستمبر 2021 سے قبل مکمل ہو جائے گا۔

نیٹو کے سیکرٹری جنرل جینز اسٹالٹن برگ نے نیٹو کونسل  کے وزرائے دفاع و وزرائے خارجہ کے اجلاس کے بعد جاری کردہ بیان میں کہا تھا کہ نیٹو کے رکن ملک یکم مئی سے افغانستان سے انخلاء کے معاملے میں باہم متحد ہیں۔



متعللقہ خبریں