جرمنی: دو ترک عورتوں پر نسلیت پرستانہ حملہ

برلن میں آپس میں ترکی زبان میں بات کرنے کی وجہ سے دو ترک عورتوں کو نسلیت پرستانہ حملے کا سامنا

جرمنی: دو ترک عورتوں پر نسلیت پرستانہ حملہ

جرمنی کے دارالحکومت برلن میں آپس میں ترکی زبان میں بات کرنے کی وجہ سے دو ترک عورتوں کو نسلیت پرستانہ حملے کا سامنا کرنا پڑا۔

پولیس کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق گذشتہ شام  وٹیناو  ریلوے اسٹیشن  پر اپنے بچوں کے ساتھ پر ایک بیچ پر بیٹھی 2 ترک عورتوں پر حملہ کرنے والے شخص کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

بیان کے مطابق مذکورہ شخص نے عورتوں سے جرمن زبان میں بات کرنے کا مطالبہ کیا اور عملی طور پر بھی مداخلت کی۔

سینتیس سالہ حملہ آور کو اطراف کے افراد نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا۔

حملہ آور کے خلاف نسلیت پرستانہ حملے  اور لوگوں کو زخمی کرنے کے الزامات کے ساتھ مقدمہ دائر کر دیا گیا ہے۔



متعللقہ خبریں