جرمنی نے سعودی عرب کو اسلحہ کی فروخت بحال کر دی

جرمنی  میں تیار کردہ  عسکری سامان اور سافٹ ویئرز کو اولین طور پر فرانس اور پھر وہاں سے سعودی عرب  اور متحدہ عرب امارات کو بھیجا جائیگا

جرمنی نے سعودی عرب کو اسلحہ کی فروخت بحال کر دی

 

جرمنی نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل  کے بعد سعودی عرب کو اسلحہ کی فروخت  میں رکاوٹ کو ختم کر دیا ہے۔

جرمن پریس میں شائع خبروں کے مطابق  جرمن سلامتی کونسل نے  خلیجی ممالک کو فوجی سازو سامان اور ٹیکنالوجی کی فروخت  کے بل کی منظوری دے دی ہے۔

جرمنی  میں تیار کردہ  عسکری سامان اور سافٹ ویئرز کو اولین طور پر فرانس اور پھر وہاں سے سعودی عرب  اور متحدہ عرب امارات کو بھیجا جائیگا۔

فرانس  اور جرمنی  کی جانب سے تیار کردہ  کوبرا     ریڈار کے بعض  پارچہ جات اور سافٹ ویئر اپ ڈیٹس  کی متحدہ عرب امارات کو برآمدات کی بھی کونسل نے منظوری دے دی ہے۔

یاد رہے کہ یورپی اتحادی  ممالک  فرانس اور برطانیہ نے  جرمنی  کی جانب سے اسلحہ کی برآمدات کو روکنے کے فیصلے پرمشترکہ دفاعی پالیسیوں کو نقصان پہنچانے کے جواز میں  نکتہ چینی کی تھی۔

ادھر سعودی عرب کے مذکورہ اسلحہ اور فوجی سازو سامان کو یمن کے خلاف جنگ میں استعمال کیے جانے کے اندیشے کے  باعث  اس موضوع پر جرمنی میں طویل عرصے سے  بحث جاری تھی۔



متعللقہ خبریں