اسرائیل کو دفاع فراہم کرنا ہمارا فریضہ نہیں ہے: اسٹالٹن برگ

نیٹو مشرق وسطی امن مرحلے میں اور علاقے کے فوجی اختلافات میں شامل نہیں ہے، اسرائیل کو تحفظ فرہام کرنا ہمارا فریضہ نہیں ہے: جینز اسٹالٹن برگ

984582
اسرائیل کو دفاع فراہم کرنا ہمارا فریضہ نہیں ہے: اسٹالٹن برگ

نیٹو کے سیکرٹری جنرل جینز اسٹالٹن برگ نے کہا ہے کہ نیٹو سمجھوتے کی نیٹو کے داخلی اتحاد کو مکمل کرنے والی 5 ویں شق میں موجود سکیورٹی کی ضمانت اسرائیل کے لئے معقولیت  نہیں رکھتی۔

جرمن جریدے در اسپیگل کے لئے انٹرویو میں اس سوال کے جواب میں  کہ "ایران کی طرف سے درپیش خطرات سے کوئی بھی ملک اسرائیل جتنا متاثر نہیں ہو رہا۔ کیا حملہ ہونے کی صورت میں نیٹو اسرائیل کا دفاع کرے گا؟  اسٹالٹن برگ نے کہا کہ اسرائیل ایک اتحادی ہے لیکن نیٹو کا رکن نہیں ہے۔

نیٹو کے مشرق وسطی امن مرحلے میں اور علاقے کے فوجی اختلافات میں شامل نہ ہونے کا ذکر کرتے ہوئے اسٹالٹن برگ نے کہا کہ "یہ ہمارا فریضہ نہیں ہے"۔

انہوں نے کہا کہ ایران کے جوہری سمجھوتے کے معاملے میں امریکی انتظامیہ اور دیگر اتحادیوں کے درمیان اختلافات پائے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایران سمجھوتے پر قائم ہے لیکن سوال یہ ہے کہ کیا امریکہ کے بغیر یہ سمجھوتہ برقرار رہے گا یا نہیں؟ خواہ کچھ بھی ہو امریکہ کی طرف سے یورپی فرموں پر پابندیوں کا اثر  بڑے پیمانے پر   ہو گا۔



متعللقہ خبریں