ٹی آرٹی کے ڈائریکٹر جنرل سوباجی: یورپی نشریاتی ادارے دہشت گردی کی مخالفت کریں

ٹی آرٹی کے ڈائریکٹر جنرل سوباجی: یورپی نشریاتی ادارے دہشت گردی کی مخالفت کریں

1831582
ٹی آرٹی کے ڈائریکٹر جنرل  سوباجی: یورپی  نشریاتی ادارے دہشت گردی کی مخالفت کریں
Z.Sobacı.2.jpg
Z.Sobacı.3.jpg
Z.Sobacı.4.jpg

یورپین  براڈکاسٹنگ یونین  ۔  EBU  ، ٹرکش ریڈیو ٹیلی ویژن  کارپوریشن  کی میزبانی میں  41 ممالک سے   قریب 200 اعلی سطحی   متعلقہ   افسران کی شراکت سے منعقدہ  میڈیا سربراہی اجلاس میں    یکجا ہوئی ۔ سربراہی اجلاس سے  خطاب کرنےو الے ڈائریکٹر جنرل ٹی آرٹی  سوباجی نے کہا کہ "عالمی دہشت گردی کے خلاف سب سے زیادہ  طاقتور  جدوجہد  کرنے والے ترکی کے سرکاری نشریاتی ادارے کی حیثیت سے   ہم  دہشت گردی کا منبع اور ہدف چاہے کچھ بھی کیوں نہ ہو  مل جل کر اس  کے خلاف مزاحمت کرنے      کے  عوامل میں  باہمی تعاون کی اپیل کرتے ہیں۔ "

EBU      کے نمائندے وبائی امراض کی وجہ سے دو سالوں میں پہلی بار آمنے سامنے یکجا ہوئے ہیں ۔ TRT کے ڈائریکٹر جنرل مہمت زاہد سوباجی اور EBU کے جنرل ڈائریکٹر نول کران کے علاوہ، 41 ممالک کے تقریباً 200 اعلیٰ سطحی نشریاتی اداروں نے استنبول میں TRT کی میزبانی میں EBU میڈیا سمٹ میں شرکت کی۔ دو دن تک جاری رہنے والے اس پروگرام میں عوامی نشریات کے مستقبل، چیلنجز سے نمٹنے، نئے رجحانات اور نوجوانوں تک رسائی جیسے  متعدد معاملات   زیر بحث آئیں گے۔

"ترک  صدر  کا  منشور کہ  'ہماری دنیا 5 ممالک سے بڑی ہے'  ہم  سب کے مشترکہ اور با حفاظت  مستقبل   کے  لیے ایک  واحد  سرمایہ کاری کا   خلاصہ ہے"

سربراہی اجلاس  کی افتتاحی تقریر میں  ڈائریکٹر جنرل ٹی آرٹی   مہمت زاہد سوباجی  نے کہا کہ وہ طویل عرصے کے بعد آمنے سامنے منعقد ہونے والے  2022 EBU میڈیا سمٹ کی میزبانی  کرنے پرجوش ہیں، ۔ انہوں نے زور دیتے ہوئے  کہا کہ غیر جانبداری، انصاف پسندی اور درستگی کی ہماری روایتی اقدار ڈیجیٹل میڈیا کے مستقبل کے  اٹل معیاروں میں شامل  ہونے چاہئیں ، "اس مقصد کے  تحت، EBU کے اراکین کی حیثیت سے ہم سب  مشترکہ اور تخلیقی اقدامات کے ساتھ تعاون  کو ہمیشہ کی طرح یکجہتی کے جذبے کے ساتھ آگے بڑھائیں گے   اور  بیک  وقت  نشریاتی ثقافت کو مزید تقویت بخشنے کے لیے اسے مزید توسیع دیتے  رہیں گے۔ ہمیں اس چیز کو فراموش نہیں کرنا چاہیے کہ  ہم  اکٹھے زیادہ  مضبوط ہیں،‘‘

ڈائریکٹر جنرل سوباجی نے کہا کہ  دور حاضر میں اہمیت کے حامل عالمی میڈیا  اداروں میں شمار  ٹی آر ٹی اپنے 18 ٹی وی چینلز،17 ریڈو چینلز کےعلاوہ 9 ڈیجیٹل پلیٹ فارمز،ڈیجیٹل ایپلیکیشنز  اور ملکی و غیر ملکی سطح پر متعدد تقریبات کے انعقاد کے حوالے سے نشریاتی شعبے میں اولین حیثیت  رکھتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ   اس وقت تمام انسان   پوری دنیا کو اپنا گھر سمجھتے ہیں،ہر انسان قیمتی ہے  اور ہم اسی نظریے کے تحت اس بات کے ادراک کا ذمہ لیےہوئے ہیں۔ صدر رجب طیب ایردوان  نے متعدد بار عالمی پلیٹ فارمز پر کہا کہ دنیا 5 ممالک   سے کہیں زیادہ اہم اور بڑی ہے،ایک منصفانہ عالمی نظام کی تشکیل  اس تعریف کی صحیح معنوں میں ترجمانی کرتی ہے کیونکہ  یہ  ہمارے مشترکہ اور محفوظ مستقبل کی ضمانت بن سکتی ہے۔ ٹی آر ٹی  دور حاضر میں    در پیش تمام عالمی مسائل پر بات چیت اور ان کے حل کی تلاش کےلیے عالمی سربراہوں کو یکجا کرنے اور دیگر معاشرتی وثقافتی ہم آہنگیوں کی حامل تقریبات کے انعقاد میں نمایاں رہا ہے۔ ہم اس وقت  نوجوانوں اور سرکاری نشریات کے درمیان تعلقات پر مشتمل  ترجیحات اور  عالمی مسائل پر ان کے نظریات  اور حل کی تجاویز سے متعلق امور جاری رکھے ہوئے ہیں۔

ٹی آر ٹی  عالمی خبر پلیٹ فارمز   کا حوالہ دیتے ہوئے سوباجی نے کہا کہ  ہمارا ادارہ   آج ،ٹیلی ویژن اور ریڈیو کی نشریات  اورڈیجیٹل پلیٹ فارمز کے ذریعے دنیا کے 7 براعظموں کے لیے 41 زبانوں  میں پیش کر رہا ہے۔ ٹی آر ٹی ورلڈ کے علاوہ  ،ڈیجیٹل پلیٹ فارمز میں ٹی آر ٹی جرمن،ٹی آر ٹی رشین،ٹی آر ٹی عربی اور اب  ٹی آر ٹی فرنچ بھی  اس  میں شامل ہو گیا ہے،اس وقت ہم  افریقی،بلقانی اور فارسی ڈیجیٹل پلیٹ فارمز    تیار کرنے کےلیے سرگرمیاں جاری رکھے ہوئ ہیں۔

"دہشت گردی  کا ماخذ اور ہدف خواہ کچھ بھی ہو  ہم، سب سے اس کے خلاف تعاون کی اپیل کرتے ہیں"۔

سوباجی نے EBU میڈیا سربراہی اجلاس میں تاریخی اپیل کی اور کہا ہے کہ بحرانوں، مسائل اور تبدیلیوں  پر، ڈیجیٹلائزیشن  مرحلے سے ہٹ کر  ،بات کرنا ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ بحیثیت پبلک نشریاتی ادارے کے ہم معلوماتی آلودگی، مقصدی ادارکی آپریشنوں اور بے بنیاد معلومات کے خلاف پوری قوت سے جدوجہد کرنے والا ایک اہم ادارہ ہیں۔ پبلک نشریاتی اہلکاروں کی حیثیت سے ہماری ذمہ داری بس یہیں تک محدود نہیں ہے۔ ہمیں تعصب، آمدنی کی غیر منصفانہ تقسیم، گلوبل دہشت گردی، سائبر سکیورٹی اور ماحولیاتی مسائل کے بارے میں رائے عامہ کو باشعور بنانا چاہیے۔ گلوبل دہشت گردی کے خلاف مضبوط ترین جدوجہد  کرنے والے ترکی کے سرکاری نشریاتی ادارے کی حیثیت سے ہم، دہشت گردی کے ماخذ اور ہدف کا امتیاز کئے بغیر جوابی کاروائی کے پہلو پر، آپ سب سے ایک مضبوط تعاون کی اپیل کرتے ہیں۔

"ترکی امریکہ کے بعد ڈرامہ سیریل کی برآمد میں دوسرے نمبر پر ہے"

اجلاس میں ٹی آر ٹی کے ڈراموں اور مشترکہ پیشکشوں کے کامیاب ڈیجیٹل کام کے بارے میں بات کرتے ہوئے سوبا جی نے کہا ہے کہ "میں ٹی آر ٹی کے ڈراموں کے ساتھ گلوبل دلچسپی کی طرف توجہ مبذول کروانا چاہتا ہوں۔ ترکی، امریکہ کے بعد، ڈراموں کی برآمدات میں دوسرے نمبر پر ہے۔ اس کامیابی میں ہمارے ادارے  کے قائدانہ کردار کی تردید ناممکن ہے۔ ہمارے ڈرامہ سیریل، مشترکہ پیشکشیں اور کارٹون فلمیں دنیا بھر میں مقبولیت حاصل کر رہی ہیں۔ ہم، آئندہ مہینوں میں بین الاقوامی ٹی آر ٹی ڈیجیٹل ویڈیو پلیٹ فورم کے لئے کاروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ یہ ڈیجیٹل پلیٹ فورم اور نئے مندرجات EBU کے اراکین کے ساتھ ہماری مشترکہ پیشکشوں کے ساتھ ساتھ EBU پری بائی نیٹ ورک  کے پیش کردہ امکان اور باہمی تعاون کے مواقع سے مزید استفادے کا موقع فراہم کرے گا۔ سوباجی نے کہا ہے کہ ٹی آر ٹی نے وباء کے دنوں میں EBU کے "کانٹینٹ اپیل" نامی ا ور اراکین کے لئے بِلا معاوضہ  پروگرام  کے پروگرام  پُول میں،  دستاویزات اور ڈراموں جیسے مختلف اقسام کے مندرجات  کے ساتھ، اہم کردار ادار کیا ہے۔ اس کے علاوہ ٹی آر ٹی ،سینما کے شعبے میں بھی بین الاقوامی تعاون  کو ہر گزرتے دن کے ساتھ زیادہ موئثر بنا کر، ہر ایک کے دل میں گھر کر رہا ہے۔ حالیہ تین سالوں میں ٹی آر ٹی کی مشترکہ پیشکش فلموں میں ہم نے  کینز، برلن، کارلووی ویری، وینس، سان سبسٹئین، وارسا اور لوکانو فلم فیسٹیولوں سمیت 300 سے زائد قومی و بین الاقوامی فیسٹیولوں میں تقریباً 275 ایوارڈ حاصل کئے ہیں۔ علاوہ ازیں ٹی آرٹی بین الاقوامی فلم فیسٹیولوں میں دئیے جانے والے ٹی آر ٹی خصوصی ایوراڈوں کے ساتھ، اداراتی ساجھے داروں اور تقریبات کے ساتھ بھی اس شعبے میں شراکت داریوں اور باہمی تعاونوں میں اہم  کردار ادا کر رہا ہے"۔

اجلاس سے خطاب میں EBU کے ڈائریکٹر نوئل کیرن  نے اس شاندار اجلاس اور گرمجوش میزبانی پر ٹی آرٹی کا  شکریہ ادا کیااور کہا ہے کہ " یہ اجتماع ہمارے لئے  نہایت قابل قدر ہے ۔ ہمیں امید ہے کہ اس وسیلے سے ہمارے ٹی آرٹی کے ساتھ اشتراک میں  بھی اضافہ ہو گا"۔

واضح رہے کہ یورپ میں نشریاتی اداروں کو ایک جگہ جمع کرنے کے زیرِ مقصد قائم کی گئی EBU دنیا بھر میں پبلک نشریاتی اداروں کی اہم ترین یونینوں میں سے ایک شمار کی جاتی ہے۔

 

 

 

 

 

 

 



متعللقہ خبریں