ترکی، فرنٹ لائن پر حملوں کے بعد عسکری کاروائی میں 44 دہشت گرد جہنم واصل

ترک وزیر دفاع نے دارالحکومت انقرہ میں آکچا قلعے  فرنٹ لائن پر دہشت گردانہ حملے کے بعد شروع کی گئی کارروائیوں کے بارے میں آگاہی کرائی

1763020
ترکی، فرنٹ لائن پر حملوں کے بعد عسکری کاروائی میں 44 دہشت گرد جہنم واصل

وزیر دفاع خلوصی  آقار نے کہا  ہے کہ شانلی عرفا  کی تحصیل آکچا قلعے کے سرحدی  علاقے پر  دہشت گرد حملے کے بعد "سزا دینے کی کارروائیوں" میں 44 دہشت گردوں کو بے بس کر دیا گیا ہے۔

آقار نے دارالحکومت انقرہ میں آکچا قلعے  فرنٹ لائن پر دہشت گردانہ حملے کے بعد شروع کی گئی کارروائیوں کے بارے میں آگاہی کرائی۔

انہوں نے یاد دہانی کرائی کہ  3 بہادر فوجی دہشت گردوں کے دھماکہ خیز  حملے میں شہید ہو گئے تھے"غدارانہ حملے کے بعد، ہم نے مقررہ اہداف کے خلاف تعزیری کارروائیاں شروع کیں۔ سزای کارروائیوں کے نتیجے میں ہمارے بہادر فوجیوں  نے ابتک 44 دہشت گردوں کو جہنم واصل کیا ہے۔

ہم امید کرتے ہیں کہ شام میں ہمارے مذاکرات کار معاہدوں کے تحت اپنی ذمہ داریاں پوری کریں گے۔ ہم کہہ سکتے ہیں کہ ہماری سرحدوں کے پار سے آنے والے حملے، جنہیں ہم منصوبہ بندی سمجھتے ہیں، ہماری برداشت کی حد سے بھی تجاوز کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ "کسی کو اس میں کوئی شک نہیں ہونا چاہئے کہ ہر حملے کا جواب دیا جائے گا اور اس کا حساب لیا جائے گا۔"

 



متعللقہ خبریں