ترکی اور انڈونیشیا کے درمیان 'ٹریول کوریڈور' نظام پرعمل درآمد شروع

وزیر خارجہ میولودچاوش اولو نے انڈونیشیا کے وزیر خارجہ ریٹنو مارسودی سے ملاقات کی ، جو اپنے سرکاری دورے کے ایک حصے کے طور پر دارالحکومت انقرہ میں ہیں

1718530
ترکی اور انڈونیشیا کے درمیان 'ٹریول کوریڈور'  نظام پرعمل درآمد شروع

ترکی اور انڈونیشیا کے درمیان 'ٹریول کوریڈور' کا انتظام نافذ العمل  کیا جا رہا ہے۔

وزیر خارجہ میولودچاوش اولو نے انڈونیشیا کے وزیر خارجہ ریٹنو مارسودی سے ملاقات کی ، جو اپنے سرکاری دورے کے ایک حصے کے طور پر دارالحکومت انقرہ میں ہیں۔

چاوش اولو اور مارسودی نے ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس کی۔

اس موقع پر چاوش اولو نے کہا ہے کہ  صدر رجب طیب ایردوان انڈونیشیا کا دورہ کریں  گے اور ملاقات میں صدر ایردوان کے دورہ  انڈونیشیا کا جائزہ لیا گیا ہے۔

چاوش اولو نے بتایا کہ دونوں ممالک کے درمیان آج دو دستاویزات پر دستخط کیے گئے ہیں۔

ان دستاویزات میں سے ہر ایک انڈونیشیا کے ساتھ ہمارے دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم تمام شعبوں خاص طور پر تجارت ، دفاعی صنعت اور صحت میں اپنے تعلقات کو مزید فروغ دینے کی پوری خواہش رکھتے ہیں۔

چاوش اولو نے اس بات پر زور دیا کہ انہوں نے مشترکہ اعلامیہ کے ساتھ 'ٹریول کوریڈور' کے انتظام کو  نافذ العمل کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ  ہم نے ویکسینیشن سرٹیفکیٹس کی باہمی شناخت کو آج کے اعلامیے میں شامل کیا ہے۔ ہمارے شہریوں کے باہمی دوروں میں سہولت ہوگی۔ ہمارے ویکسین سرٹیفکیٹ دونوں ممالک میں قبول کیے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ انڈونیشیا  کے باشندوں کو  30 دن تک ویزا کے بغیر ترکی کی سیر کی اجازت ہوگی۔   انہوں نے کہا انڈونیشیا کے ساتھ دفاعی صنعت میں حالیہ برسوں میں نمایاں پیش رفت  دیکھی گئی ہے۔ ہمیں درمیانی اور طویل مدتی میں مشترکہ پیداوار اور ٹیکنالوجی کی منتقلی حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔

چاوش اولو نے کہا کہ ترکی تعاون اور رابطہ ایجنسی (TİKA) کے ساتھ دستخط شدہ دستاویز کے ساتھ ، ترکی اور انڈونیشیا تیسرے ممالک کو ترقیاتی معاونت فراہم کرنے کے لیے تعاون کریں گے۔



متعللقہ خبریں