یونان کو تحریکی کاروائیوں سے باز آ جانا چاہیے: چاوش اولو

ہم اپنے شروع کردہ ڈائیلاگ کو ٹھوس مرحلے میں تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ اس معاملے میں ہم پُر خلوص اور پُر عزم ہیں: وزیر خارجہ میولود چاوش اولو

1661443
یونان کو تحریکی کاروائیوں سے باز آ جانا چاہیے: چاوش اولو

ترکی کے وزیر خارجہ میولود چاوش اولو نے کہا ہے کہ یونان کو تحریکی کاروائیوں سے باز آ جانا چاہیے۔

وزیر خارجہ چاوش اولو نے انطالیہ ڈپلومیسی فورم کے اختتام پر پریس کانفرنس کا انعقاد کیا۔

اس سوال کے جواب میں کہ کیا یہ موسم گرما ترکی اور یونان کے درمیان ایک پُر سکون موسمِ گرما ہو گا؟   چاوش اولو نے کہا ہے کہ بحیرہ ایجئین اور مشرقی بحیرہ اسود میں جاری تناو کے بعد ہم نے یونان کے ساتھ ڈائیلاگ شروع کیا ہے، مذاکرات کئے ہیں اور مشاورتی مذاکرات کو دوبارہ شروع کر دیا ہے۔

انہوں نے یونان کے وزیر خارجہ نکوس دیندیاس کے دورہ ترکی اور اپنے دورہ یونان کا ذکر کیا اور کہا ہے کہ برسلز میں  صدررجب طیب ایردوان اور یونان کے وزیر اعظم کریاکوس میچوتاکس کے درمیان مذاکرات بھی کافی مثبت رہے ہیں۔ لیکن کیا تمام مسائل حل ہو گئے ہیں؟ نہیں۔ اس سے ہمارے اس عزم کی عکاسی ہوتی ہے کہ جو ہم مسائل کو ڈائیلاگ کے ذریعے حل کرنے کے لئے رکھتے ہیں۔ امید ہے کہ دونوں طرف سے یہ خلوصِ نیت جاری رہے گا۔

وزیر خارجہ چاوش اولو نے کہا ہے کہ اس سب کے ساتھ ساتھ یونان کو تحریکی کاروائیوں سے بھی باز آ جانا چاہیے۔ ہماری پریس کانفرنس اچھی گزرنے کے بعد ہمارے دوست دیندیاس ہماری پیٹھ پیچھے بہت سی باتیں کہتے ہیں۔ اس سب کی ضرورت نہیں ہے ۔ ہم اس سب کو دیکھا ان دیکھا کر رہے ہیں۔ پوری ٹوئر ازم سیزن میں بحیرہ ایجئین میں کسی بھی قسم کی مشقیں نہ کرنے کے بارے میں ہمارا یونان کے ساتھ سمجھوتہ طے ہے۔ لیکن اب ہم دیکھ رہے ہیں یونان نے نیوٹیکس کا اعلان کر دیا ہے۔ یونان نے ہمارے اس سمجھوتے کو بھی فسخ کر دیا ہے۔  یونان کا ان تحریکی کاروائیوں سے باز آنا ضروری ہے۔ میں جانتا ہوں اپنے عوام کی تسلی کے لئے ایسا کرتے ہیں لیکن اس کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ ہم اپنے شروع کردہ ڈائیلاگ کو ٹھوس  مرحلے میں تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ اس معاملے میں ہم پُر خلوص اور پُر عزم ہیں۔



متعللقہ خبریں