ترکی آرمینیا میں حکومت کا تختہ الٹنے کی کوششوں کی مذمت کرتا ہے: چاوش اولو

وزیر خارجہ میولود چاوش اولو  نے ان خیالات کا اظہار  ہنگری کے دارالحکومت بدا پست میں  ہونے والے سرکاری مذاکرات کے بعد کیا ہے

1590788
ترکی آرمینیا میں حکومت کا تختہ الٹنے کی کوششوں کی مذمت کرتا ہے: چاوش اولو

ترکی،دنیا میں جہاں بھی بغاوت اورمارشل لاء لگانے کی کوششیں کی جاتی ہے ہمیشہ ہی سے  اس کی مخالفت کرتا چلاآیا ہے اب  آرمینیا میں بھی حکومت کا تختہ الٹنے کی  کوشش کی مذمت کرتا ہے۔

وزیر خارجہ میولود چاوش اولو  نے ان خیالات کا اظہار  ہنگری کے دارالحکومت بدا پست میں  ہونے والے سرکاری مذاکرات کے بعد کیا ہے۔

 وزیر خارجہ میولود چاوش اولو  نے  ہنگری کے وزیر خارجہ پیٹر سیزجارٹو سے ملاقات کی ہے۔

اس ملاقات کے بعد ، وزیر خارجہ میولود چاوش اولو نے اپنے ہنگری کے ہم منصب پیٹر سیزجارٹو کے ساتھ مشترکہ طور پر پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔

ترکی کےوزیر خارجہ میولود  چاوش اولو  نے مذاکرات میں یورپی یونین  کی رکنیت اور  دوطرفہ تعلقات پر بات چیت  کرنے سے آگاہ کیا۔

انہوں نے آرمینیا میں  ہونے والی  پیش رفت  کے بارے میں سوالا کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ

" ترکی،دنیا میں جہاں بھی بغاوت اورمارشل لاء لگانے کی کوششیں کی جاتی ہے ہمیشہ ہی سے  اس کی مخالفت کرتا چلاآیا ہے اور  اب  آرمینیا میں بھی حکومت کا تختہ الٹنے کی  کوشش کی مذمت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ  آرمینیا میں  منتخب حکومت کے اقتدار میں آنے کے بعد اسے مستعفی ہونے پر مجبور نہیں کیا جاسکتا ہےاس قسم کے استعفیٰ  کو ہر گز قبول نہیں کیا جائے گا۔ہم خطے کے ممالک کے ساتھ جو کچھ کرنے کی ضرورت محسوس ہوئی کریں گے۔ ملکمیں سول حکومت کا تختہ الٹنے  سے ملک کے استحکام کو نقصان پہنچے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ترکی ہمیشہ ہی اصولی طور پر  سول حکومت کا تختہ الٹنےکی کوششوں کے خلاف ہے اور اس کی مذمت کرتا ہے۔  

آرمینیا کے چیف آف جنرل اسٹاف ، اونک گیسپریان اور سینئر کمانڈروں نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے وزیر اعظم نیکول پشینان سے استعفی دینے کا مطالبہ کیا تھا ۔ دوسری جانب پشینان  ملک میں حکومت کا تختہ الٹنے  کیے جانے کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے چیف آف  جنرل اسٹاف چیف گاسپرین کو برخاست کرنے کا اعلان کیا تھا۔



متعللقہ خبریں