جنگلاتی اراضی میں اضافہ اور شجرکاری، ترکی کی کامیابی اقوام متحدہ کے ریکارڈ پر آ گئی

ترکی جنگلاتی اراضی میں اضافہ کرنے والے ممالک کی فہرست میں 46 ویں نمبر سے بڑھ کر 27 نمبر پر آ گیا ہے

1589765
جنگلاتی اراضی میں اضافہ اور شجرکاری، ترکی کی کامیابی اقوام متحدہ کے ریکارڈ پر آ گئی

جنگلاتی اراضی میں اضافے اور شجرکاری  کے شعبوں میں ترکی کی کامیابی اقوام متحدہ کے ریکارڈ پر آ گئی ہے۔

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خوراک و زراعت FRA کی " 2015۔2020 گلوبل جنگلاتی وسائل جائزہ" رپورٹ کے مطابق ترکی جنگلاتی اراضی میں اضافہ کرنے والے ممالک کی فہرست میں 46 ویں نمبر سے بڑھ کر 27 نمبر پر آ گیا ہے۔

 تاہم سب سے زیادہ شجرکاری کرنے والے ممالک  کی فہرست میں ترکی یورپ  میں پہلے اور دنیا بھر میں چھٹے نمبر پر ہے۔

جنگلاتی اراضی میں اضافے کے دائرہ کار میں 1973 میں ترکی کی جنگلاتی اراضی کا رقبہ 2 کروڑ ایک لاکھ 99 ہزار 296 ہیکٹر  تھا جو 2018 میں بڑھ کر 2 کروڑ 26 لاکھ 21 ہزار 935 ہیکٹر  ہو گیا۔  گذشتہ سال کے دوران ملک کی جنگلاتی اراضی کا رقبہ 2 کروڑ 27 لاکھ 40 ہزار ہیکٹر تک پہنچ گیا ہے۔

ترکی محکمہ جنگلات کے ڈائریکٹر بکر قارا جا بے نے کہا ہے کہ جنگلاتی اراضی میں اضافے اور شجرکاری میں ترکی کی کامیابی کا FRAکی رپورٹ میں ریکارڈ کی شکل اختیار کرنا  نہایت خوش کن امر  ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ "حالیہ 18 سال میں ہم نے اپنی جنگلاتی اراضی میں 2.1 ملین ہیکٹر کا اضافہ کیا ہے۔ سال 2023 کے لئے ہمارا ہدف اس رقبے کو 23.4 ملین ہیکٹر تک پہنچانا ہے کہ جو ملک کے کُل رقبے کے 30 فیصد کا مفہوم رکھتا ہے"۔



متعللقہ خبریں