ترکی برادر ملک آذربائیجان کو ہر گز تنہا نہیں چھوڑے گا، صدر ایردوان

آیا صوفیہ  کا یہ عمل ہماری حاکمیت کا معاملہ ہے۔ لہذا اس چیز سے لا تعلق افراد اور اداروں کی اس معاملے میں مداخلت کا سوال تک پیدا نہیں ہوتا

1457009
ترکی برادر ملک آذربائیجان کو ہر گز تنہا نہیں چھوڑے گا، صدر ایردوان

صدر رجب طیب ایردوان  کا کہنا ہے کہ ترکی برادر ملک آذربائیجان کو تنہا نہیں چھوڑے گا۔

ایردوان نے استنبول میں  آرمینیا کے آذربائیجان پر حالیہ ایام میں حملوں پر اپنے جائزے پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’’برادر  ملک آذربائیجان کو ہم ہر گز تنہا نہیں چھوڑیں گے۔  پہاڑی علاقہ قارا باغ اسوقت آرمینیا کے قبضے میں ہے۔ منسک سہہ رکنی گروپ  نے 25 تا 30 برسوں سے اس مسئلے کو التوا میں چھوڑا ہوا ہے۔

ترک صدر نے آیا صوفیہ کو عبادت کے  لیے کھولے  جانے کے معاملے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ’’بیرون ِ ملک  میں اس ضمن میں رد عمل ہمارے لیے کوئی وقعت نہیں رکھتا۔ آیا صوفیہ  کا یہ عمل ہماری حاکمیت کا معاملہ ہے۔ لہذا اس چیز سے لا تعلق افراد اور اداروں کی اس معاملے میں مداخلت کا سوال تک پیدا نہیں ہوتا۔

مسئلہ لیبیا پر بھی اپنے جائزے پیش کرنے والے جناب ایردوان نے  بتایا کہ ’’ابتک لیبیا میں ہم نے جو بھی ذمہ داری اپنے سر لی ہے ان پر عمل درآمد کو آئندہ بھی جاری رکھا جائیگا۔ ہمارے اس ملک کے ساتھ باہمی تعلقات ڈیڑھ سو سالہ ماضی پر محیط ہیں۔‘‘

 

 



متعللقہ خبریں