صدرپاکستان کی جانب سے ترکی کی دو اعلیٰ سیاسی شخصیات کو ہلالِ پاکستان اور ہلالِ امتیاز کے ایوارڈز

تقریب میں مہمانوں سے خطاب کرتے ہوئے سفیر پاکستان محمد سائرس سجاد قاضی نے پاکستان اور ترکی کے تعلقات مزید مضبوط بنانے  میں  اسماعیل قہرمان  اور پروفیسر ڈاکٹر   رجب آقداع  کی گرانقدر خدمات کو خراج تحسین پیش کیا

صدرپاکستان کی جانب سے ترکی کی دو اعلیٰ سیاسی شخصیات کو ہلالِ پاکستان اور ہلالِ امتیاز کے ایوارڈز
صدرپاکستان کی جانب سےدو ترک عظیم شخصیات کو ایوارڈ
صدرپاکستان کی جانب سےدو ترک عظیم شخصیات کو ایوارڈ

صدرپاکستان کی جانب سےدو ترک عظیم شخصیات کو ایوارڈ

ترکی کی  دارالحکومت  انقرہ میں پاکستان کے سفیر محمد سائرس سجاد قاضی نے گزشتہ روز منعقد ہونے والی ایک باوقار تقریب میں ترکی کی دو عظیم  سیاسی شخصیات کو  پاکستان کے اعلی سول ایوارڈز سے  نوازا ۔ صدر پاکستان کی جانب سے ممتاز سیاستدان اور ترکی کی قومی اسمبلی کے سابق اسپیکر اسماعیل قہرمان کو"  ہلالِ پاکستان "  سے نوازا گیا جبکہ سابق نائب وزیراعظم  اور وزیر صحت پروفیسر ڈاکٹر رجب آقداع  کو صدر پاکستان کی جانب سے"  ہلالِ امتیاز" سے نوازا گیا۔  دونوں  ترک شخصیات کو  یہ ایوارڈز   پاکستان اور  ترکی کے تعلقات کو فروغ دینے استحکام کے لیے  کی جانے والی کوششوں  کے اعتراف کے طور پر دیا گیا ہے۔

  تقریب میں مہمانوں سے خطاب کرتے ہوئے سفیر پاکستان محمد سائرس سجاد قاضی نے پاکستان اور ترکی کے تعلقات مزید مضبوط بنانے  میں  اسماعیل قہرمان  اور پروفیسر ڈاکٹر   رجب آقداع  کی گرانقدر خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔  انہوں نے  خاص طور پر  ذکر کیا کہ ہماری سابقہ نسلوں کی بےپناہ کوششوں کی بدولت پاکستان ترکی کے تعلقات کو فروغ ملا ہے۔ ان تعلقات کو مزید مستحکم بنانا اور اس  اعتماد کو اپنی  نوجوان نسلوں میں منتقل کرنا ہماری ذمہ داری ہے۔   اسماعیل قہرمان اور   ڈاکٹر رجب آقداع  نے  اپنے تاثرات  اس کا اظہار کرتے ہوئے  یہ ما یہ  ناز   ایوارڈز  دینے پر حکومت پاکستان کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے پاکستان اور ترکی کے برادرانہ  تعلقات کے فروغ کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھنے  کے عزم کا اظہار  کیا  ۔ اس موقع پر ان دونوں شخصیات کی زندگی کی کارہائے نمایاں پر روشنی ڈالی گئی۔  اسماعیل   قہرمان کا شمارترک  سیاست کی مایہ ناز شخصیات میں ہوتا ہے۔ 

پاکستان اور اس کے عوام کے ساتھ غیر متزلزل دوستی اور محبت ان کے شاندار سیاسی  کیریئر کا طرہ امتیاز  رہی ہے۔  1965  کی پاک بھارت جنگ کے دوران ایک نوجوان طالب علم کی حیثیت سے انہوں نے جموں کشمیر پر پاکستان کے اصولی موقف کی حمایت میں استنبول میں ایک عوامی ریلی کا اہتمام کیا۔  پاکستان سچے دوست اور خیر خواہ کی حیثیت اسماعیل قہرمان نے   اپنے پورے سیاسی کیریئر کے دوران دونوں ممالک کے تعلقات کو مستحکم بنانے کے لیے  لا تعداد  خدمات سرانجام دیں اور تمام بین الاقوامی فورمز پر پاکستان کی واشگاف  حمایت کی۔

پروفیسر ڈاکٹر  رجب آقداع  نے ایک شاندار پیشہ وارانہ اور سیاسی کیرئیر گزارا ہے۔ انہوں نے اپنے آپ کو پاکستان کا مخلص دوست ثابت کیا ہے۔ وزیر  صحت کے طور پر انہوں نے پاکستان میں نظام صحت کی بہتری کے لیے خدمات سرانجام دیں۔ پاکستان کے سرکاری ہسپتالوں میں صحت کی جدید سہولیات کی فراہمی ا  ور استعداد کی بہتری کے سلسلے میں وسیع دو طرفہ تعاون کے تحت ان کے ذاتی ویژن او کاوشوں نے پاکستان میں صحت کی خدمت کی فراہمی بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کیا۔

 اس تقریب میں ترک اراکین پارلیمنٹ، مختلف وزارتوں اور محکموں کے نمائندوں، میڈیا اور پاکستانی  

کمیونٹی  کے اراکین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔



متعللقہ خبریں