یورپی پارلیمنٹ کا '2018 ترکی رپورٹ بل' کوئی قانونی حیثیت نہیں رکھتا: حامی آق سوئے

رپورٹ میں موجود غیر حقیقی دعوے، یورپی پارلیمنٹ کے ترکی کے لئے جانبدارانہ اور متعصب روّیے کا ایک تازہ اظہار ہیں: حامی آق سوئے

یورپی پارلیمنٹ کا '2018 ترکی رپورٹ بل' کوئی قانونی حیثیت نہیں رکھتا: حامی آق سوئے

ترکی نے کہا ہے کہ یورپی پارلیمنٹ کا '2018 ترکی رپورٹ بل' کوئی قانونی حیثیت نہیں رکھتا اور ناقابل قبول ہے۔

ترکی کی وزارت خارجہ کے ترجمان حامی آق سوئے نے  یورپی پارلیمنٹ  کی خارجہ تعلقات کمیٹی کی منظوری کے بعد یورپی یونین جنرل کمیٹی میں پیش کئے جانے والے "2018 ترکی رپورٹ بل " کے بارے میں جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ قانونی  واصلیت  سے محروم اور  ایک مشورے کی حیثیت کے حامل بل  میں ترکی کی یورپی یونین کی رکنیت کے مذاکرات کو سرکاری سطح پر التوا میں ڈالے جانے کی اپیل کی گئی ہے جو ناقابل قبول ہے۔

پل کی یورپی پارلیمنٹ  کی خارجہ تعلقات کمیٹی سے منظوری کی طرف توجہ مبذول کرواتے ہوئے آق سوئے نے کہا ہے کہ حتمی رپورٹ کی منظوری 11 سے 14 مارچ کو متوقع یورپی پارلیمنٹ  جنرل کمیٹی کے اجلاس میں  دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ رپورٹ کسی قانونی  پابندی  کی حامل  نہ ہونے کی وجہ سے محض مشورہ بِل کی حیثیت رکھتی ہے لہٰذا ایسی کمزور رپورٹ کی بنیاد پر ترکی کے رکنیت مذاکرات کو سرکاری سطح پر التوا میں ڈالنے کی اپیل  کسی صورت قبول نہیں کی جا سکتی۔ علاوہ ازیں رپورٹ میں موجود غیر حقیقی دعوے، یورپی پارلیمنٹ کے ترکی کے  لئے جانبدارانہ اور متعصب  روّیے کا ایک تازہ اظہار ہیں۔

حامی آق سوئے نے کہا ہے کہ مذکورہ رپورٹ بل  اور متناقض روّیوں  کے ساتھ پیش کردہ تجاویز  کے بارے میں ہم نے ضروری اقدامات   کئے ہیں اور کرنا جاری  رکھے ہوئے ہیں۔ ہم یورپی پارلیمنٹ کے اراکین کو ترکی میں صدارتی نظامِ حکومت  رائج ہونے کے بعد ہونے والی پیش رفتوں اور موجودہ اصلاحاتی مرحلے کے بارے میں بریفنگ دے رہے ہیں لیکن اس کے باوجود جو دکھائی دے رہا ہے وہ یہ کہ رپورٹ میں ترکی کے بارے میں، اطراف  کے حلقوں  سے متاثر ہو کر ،غیر مستند دعووں کو جگہ دی گئی ہے جو نہایت افسوسناک پہلو ہے۔

انہوں  نے کہا ہے کہ ہم توقع کرتے ہیں کہ ضروری تبدیلیوں کے بعد مارچ میں یورپی پارلیمنٹ کی جنرل کمیٹی میں منظوری کے لئے پیش کی جانے والی  حتمی رپورٹ زیادہ  حقیقت پسندانہ، غیر جانبدار  اور حوصلہ افزا ہو گی کیونکہ صرف ایسی ہی کوئی رپورٹ ترکی کے لئے قابل توجہ حیثیت کی حامل ہو سکتی ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان حامی آق سوئے نے  کہا ہے کہ ترکی یورپی یونین کی رکنیت کے مرحلے میں اصلاحاتی کاموں کو جاری رکھنے کے بارے میں پُرعزم ہے۔ ان اصلاحات کو ہم سب سے پہلے، اعلیٰ معیار زندگی کے حقدار، ترک عوام کی بہبود کے لئے جاری رکھنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت ترکی کے رکنیت  مذاکرات کو التوا میں ڈالنے کی نہیں بلکہ اس مرحلے  کے راستے میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کی ضرورت ہے۔



متعللقہ خبریں