پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدے پر فوری طور پرعمل درآمد کرنے کی ضرورت ہے: وزیر خارجہ چاوش اولو

چاوش اولو نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ بدقسمتی سے عالمی برادری آج تک پناہ گزینوں  کی امداد کے بارے میں کافی حد تک کوششیں صرف کرنے میں ناکام رہی ہے اور پناہ گزین اضطراب میں مبتلا زندگی بسر کرنے پر مجبور کردیے گئے ہیں

1108899
پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدے پر فوری طور پرعمل درآمد کرنے کی ضرورت ہے: وزیر خارجہ چاوش اولو

ترکی کے وزیر خارجہ  میولوت چاوش اولو  نےاقوام متحدہ کی  جنرل اسمبلی میں پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدے کی منظوری پر بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ  یہ قدم  پناہ گزینوں کے  مسائل کو حل کرنے کے لیے  عالمی سطح پر اٹھایا جانے والا ایک اہم قدم ہے۔

انہوں نے اقوام ِ  متحدہ کی جنرل اسمبلی میں پناہ گزینوں کے معاہدے کی منظوری کے بعد اقوام متحدہ کے مہاجرین سے متعلق ہائی کمشنر میں منعقد ہونے والے تقریب کے لیے  ویڈیو پیغام جاری کیا ۔

چاوش اولو نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ بدقسمتی سے عالمی برادری آج تک پناہ گزینوں  کی امداد کے بارے میں کافی حد تک کوششیں صرف کرنے میں ناکام رہی ہے اور پناہ گزین اضطراب میں مبتلا زندگی بسر کرنے پر مجبور کردیے گئے ہیں حالانکہ ہمیں ان سب کے لئے  پُر امن طریقے سے زندگی بسر کرنے کا اہتمام کرنا چاہیے۔  انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں کی بنیادی ضروریات پورا کرنے کے ساتھ ساتھ تعلیم،  صحت اور روز گار کے مواقع بھی فراہم کرنے کی ضرورت ہے جبکہ ان پناہ گزینوں کو پناہ دینے والے ممالک  یا  اقوام کی بھی فوری طور پر مدد کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے اپنے ویڈیو  پیغام میں کہا کہ خاص طور پر ان پناہ گزینوں کو تعلیم فراہم کرنے کی اشد ضرورت ہے اور ترکی اپنے ہاں موجود پناہ گزینوں کو تعلیم فراہم کرنے کے لیے ہر ممکنہ سہولتیں فراہم کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر مطابقت ایک سنہری  موقع فراہم کرتی ہے اور ہمیں اس موقع سے فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدہ  ہی کافی نہیں ہیں بلکہ اس پر عمل درآمد کرنے کی بھی ضرورت ہے اور اب تمام طرفین کو اپنے اوپر عائد ہونے والے فرائض ادا کرنے کا وقت آن پہنچا ہے۔

 چاوش اولو نے کہا کہ آئندہ  منعقد ہونے والے پناہ گزینوں سے متعلق گلوبل فورم میں ٹھوس پراجیکٹ پیش کرنے کی ضرورت ہے اور چار ملین سے زائد افراد کی دیکھ بھال کرنے والا ملک ترکی شامی پناہ گزینوں کے لیے اب تک 33بلین ڈالر سے زائد اخراجات کرچکا ہے اور ترکی پناہ گزینوں سے متعلق اس معاہدے پر عمل درآمد کرنے سے متعلق ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔

انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں اور پناہ دینے والے ممالک کے ساتھ ساتھ ان کے بوجھ کو منصفانہ طریقے سے شئیر  کرنے کی ضرورت ہے اور کل   طے پانے والے پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدے پر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔

 پناہ گزینوں سے متعلق عالمگیر معاہدے کی 181 ممالک نے حمایت کی ہے جبکہ امریکہ نے اس کی مخالفت کی ہے۔



متعللقہ خبریں