منبج کے دہشت گرد خندقیں کھودتے ہوئے ہمارا کام آسان بنا رہے ہیں، صدر ایردوان

ہمارے وطن کی بقا، قوم کے جانی تحفظ کو خطرے سے دو چار کرنے والے  اب ہمارے ملک کے اندر سرایت نہیں کر پا رہے

1076684
منبج کے دہشت گرد خندقیں کھودتے ہوئے ہمارا کام آسان بنا رہے ہیں، صدر ایردوان

صدر رجب طیب ایردوان  کا کہنا ہے کہ  دہشت گردی کے خلاف جدوجہد کے معاملے  پر دوبارہ  سے غور اور خطرات کا تعین کرتے ہوئے ہم نے تباہ کرنے کی کاروائیاں شروع کر دی ہیں۔


جناب ایردوان نے  ساحلی سلامتی اکیڈمی کی پاسنگ آؤٹ تقریب  سے خطاب میں علیحدگی پسند دہشت گرد   تنظیم کا موضوع چھیڑا۔

انہوں نے دہشت گرد تنظیم کی جانب سے منبج میں خندقیں کھودنے کی یاد دہانی  کراتے ہوئے کہا کہ "اب  یہ لوگ منبج کے ارد گرد خندقیں کھود رہے ہیں، یعنی یہ اپنی قبریں تیار کر رہے ہیں،  ایسا لگتا ہے کہ یہ اپنا انجام خود تیار کر رہے ہیں۔"

صدر نے بتایا کہ "جیسا کہ ہم نے عفرین کو آزادی دلائی ہے ، اسی طرح منبج، عین العرب اور تل آبیاد سمیت شمالی شام  کے دیگر علاقوں کو بھی تنظیم کے مظالم سے نجات دلائی جائیگی، ہمارے وطن کی بقا، قوم کے جانی تحفظ کو خطرے سے دو چار کرنے والے  اب ہمارے ملک کے اندر سرایت نہیں کر پا رہے،  ہم ان کے  گھڑوں کا تعین کرتے ہوئے ان کو بے بس بنا رہے ہیں۔ ہماری ان کوششوں کے نتیجے میں دہشت گرد تنظیم میں شمولیت  کرنے والوں کی تعداد  اور دہشت گرد کاروائیوں میں  نمایاں  سطح پر کمی آئی ہے۔"

انہوں  نے مزید کہا کہ ترکی نے فرات ڈھال اور شاخ ِ زیتون کاروائیوں  کو  اپنےقومی امکانات کے ساتھ  اور کسی کی مدد کے بغیر  سر انجام دیا ہے، جو کہ اس چیز کا واضح مظہر ہے کہ ہم کسی کے محتاج نہیں ہیں۔

 

 

 



متعللقہ خبریں