عقیدہ خواہ کچھ بھی ہو ہر ایک کو عبادت کا حق فراہم کرنا حکومتوں کی ذمہ داری ہے: صدر ایردوان

ہم کثرت میں وحدت  کے طرز فکر پر یقین رکھتے ہیں اور یہ طرز فکر  تمام عقائد  کے بارے میں ہماری سوچ کی عکاسی کرتا ہے: صدر رجب طیب ایردوان

883312
عقیدہ خواہ کچھ بھی ہو ہر ایک کو عبادت کا حق فراہم کرنا حکومتوں کی ذمہ داری ہے: صدر ایردوان

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ سیواتی سٹیفن کلیسا کا افتتاح بین الاقوامی برادری کے لئے ایک نہایت اہم پیغام ہے۔

صدر رجب طیب ایردوان نے استنبول کے گولڈن ہارن ساحل پر واقع مشہور بلغارین کلیساسیواتی سٹیفن  کی افتتاحی تقریب  میں شرکت کی اور تقریب سے خطاب میں کہا کہ ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ عقیدہ خواہ کچھ بھی ہو ہر ایک کو اس کے عقیدے کے مطابق عبادت کا حق فراہم کرنا حکومتوں کی ذمہ داری کے شعبے میں شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ" موجودہ  دور کے حالات میں اس   کلیسا کا افتتاح اصل میں بین الاقوامی برادری کے لئے ایک اہم پیغام کی حیثیت رکھتا ہے"۔

انہوں نے کہا کہ " تاریخ کے بعض مخصوص ادوار میں پیش آنے والے تلخ واقعات  کو ہمارے، طویل باہم مل جل کر بھائی چارے کے ماحول میں گزاری گئی زندگی کے تجربے پر اثر انداز نہیں ہونا چاہیے"۔

صدر ایردوان نے کہا کہ" ہم کثرت میں وحدت  کے طرز فکر پر یقین رکھتے ہیں  اور یہ طرز فکر  تمام عقائد  کے بارے میں ہماری سوچ کی عکاسی کرتا ہے"۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ 15 سالوں میں ترکی  کی طرف سے ملک میں موجود عبادت گاہوں کے ساتھ ساتھ وسطی ایشیاء، شمالی افریقہ، جنوبی ایشیاء، مشرق وسطیٰ اور مشرقی یورپ سمیت ایک وسیع جغرافیے میں 5 ہزار عبادت گاہوں کی تعمیر و مرمت   کی گئی ہے۔

صدر ایردوان نے کہا کہ ہماری نگاہ میں استنبول کے دیمیر کلیسا میں عبادت  کی آزادی  میں اور فیلیبے ماردئیے جامع مسجد میں عبادت کی آزادی میں کوئی فرق نہیں ہے۔ لہٰذا ہمارے دوست  بویوکو نے آج بلغاریہ کے مفتی اعظم مصطفی آلش کو  بھی ساتھ لا کر اس عمل میں ایک مثبت کردار ادا کیا ہے۔

واضح رہے کہ سیواتی سٹیفن کلیسا بلغارین عیسائیوں کی عبادت گاہ ہے  اور  حالیہ دور میں ترکی میں تعمیر و مرمت کے عمل سے گزرنے والی 14 عبادت گاہوں کی آخری کڑی ہے۔



متعللقہ خبریں