وزیر اعظم بن علی یلدرم کا دورہ آذربائیجان

مغرب کے  ماضی میں       اسقدر وسیع پیمانے کے انسانی المیہ   پائے جاتے ہیں کہ اگر   یہ ان کا حساب چکانے لگیں    تو   رجسٹر ز    کے  رجسٹرز  بھر جائیں  گے

503895
وزیر اعظم بن علی یلدرم کا دورہ آذربائیجان

وزیر  اعظم  بن   علی یلدرم    کا کہنا ہے کہ  ترکی کی تاریخ میں   سر جھکانے   پر مجبور ہونے والا  کوئی واقع      نہیں پایا    جاتا ۔

انہوں نے بتایا کہ "مغرب کے  ماضی میں       اسقدر وسیع پیمانے کے انسانی المیہ   پائے جاتے ہیں کہ اگر   یہ ان کا حساب چکانے لگیں    تو   رجسٹر ز    کے  رجسٹرز  بھر جائیں  گے۔"

 آذربائیجان کا  سرکاری دورہ کرنے والے  وزیر اعظم   یلدرم    نے اپنے مذاکرات  کے دائرہ کار میں   اپنے ہم منصب  آرتُر    راسی زادے سے  ملاقات کی۔

 جناب  یلدرم نے  بلمشافہ و  بین الافود  مذاکرات کے  بعد مشترکہ  پریس کانفرس  میں  بتایا کہ  ہم نے ترکی اور آذربائیجان کو در پیش بعض    غیر حق بجانب صورتحال کا جائزہ لیا ہے۔

انہوں نے اس چیز کی یاد دہانی   کرائی کہ  ایک صدی قبل پیش آنے والے غیر واضح   واقعات     کہ جن  کے بارے میں مورخین کے درمیان  بھی    فکری تضادات پائے جاتے ہیں کہ   بارے میں جرمنی جیسے  ملک      میں  ترکی کو مورد الزام  ٹہرانے کا فیصلہ      کرنا      ایک غیر مہذبانہ  فعل     ہے،  ترکی      کے لحاظ سے اس فیصلے کی کوئی  قدر و قیمت نہیں پائی جاتی۔

تا ہم    جرمنی کی   طرح کے ہمارے اہم اتحادی اور یورپ  میں     تجارتی حصہ دار  ملک  کی پارلیمان  کے اس فیصلے نے ہمیں  سخت مایوسی دلائی ہے۔

آذری وزیر اعظم    راسی زادے نے  بھی  جرمن  وفاقی اسمبلی  کے آرمینی دعووں سے متعلق       قرارد اد  کے بارے میں    کہا کہ   خود کو جمہوری اقدار   سے   وابستہ کرنے  والے       اس ملک نے      ایک غیر منصفانہ فیصلہ کرتے ہوئے       ایک  غلط قدم اٹھایا ہے۔

انہوں نے اس بات کی یاد دہانی کرائی کہ   ایک    صدی قبل کے  دعووں کو  ایجنڈے میں لانے والے     20  سال قبل آرمینیا کے آذربائیجان     میں مظالم  پر      خاموش  تماشائی  بنے رہے ہیں



متعللقہ خبریں