آق دوان کا یورپیممالک یورپی پارلیمنٹ کے فیصلوں پر شدید ردِ عمل

یورپی ممالک ترکی پر سن 1915 کے واقعات پر ترکی پر اپنے فیصلے صادر کرنے کی کوششیں صرف کررہے ہو لیکن ہم ان ممالک کو ترکی پر اپنے فیصلے صادر کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے۔ اس قسم کا فیصلہ کرنے والے ممالک شام میں ہونے والے قتلِ عام پر خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں

250461
آق دوان کا یورپیممالک یورپی پارلیمنٹ کے فیصلوں پر شدید ردِ عمل

نائب وزیراعظم یالچین آق دوان نے کہا ہے کہ سن 1915 کے واقعات سے متعلق یورپی پارلیمنٹ اور متعدد ممالک کی پارلیمنٹوں کی جانب سے منظور کی جانے والی قرار دادوں پر اپنے شدید ردِ عمل کا ظاہر کیا ہے۔
انہوں نے انقرہ میں پارٹی کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ " یہ لوگ خود ہی ہر بات کا فیّصلہ کرلیتے ہیں اور کسی سے کچھ پوچھنے کا بھی تکلف نہیں کرتے ہیں یعنی خود ہی کھانا پکاتے ہیں اور خود ہی کھاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کے فیصلوں کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ یہ جو کثح کررہے ہیہں اپنے لیے ہی کررہے ہیں"۔
انہوں نے کہا کہ اس قسم کا فیصلہ کرنے والے ممالک شام میں ہونے والے قتلِ عام پر خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جب شام میں لاکھوں کی تعداد میں انسان قتل کیے جا رہے تھے تو یہ ممالک اس وقت کہاں تھے؟ اس وقت ان ممالک نے کیا فیصلے کیے تھے؟ اس وقت تو ان تمام ممالک نے خاموشی اختیار کیے ہوئے تھی لیکن سن 1915 کے واقعات پر ترکی پر اپنے فیصلے صادر کرنے کی کوششیں صرف کررہے ہو لیکن ہم ان ممالک کو ترکی پر اپنے فیصلے صادر کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے۔ وہ ترکی پر اپنے فیصلے نہیں ٹھونس سکتے ہیں۔

 


ٹیگز:

متعللقہ خبریں