"ایشیا میں کورونا"بعض ممالک میں تجارتی سرگرمیاں بحال

ایشیا میں کورونا کے نتیجے میں اموات کی تعداد میں کمی کے باعث بعض ممالک میں تجارتی و تعلیمی سرگرمیاں بحال کرنے کا فیصلہ کیا ہے

1410557
"ایشیا میں کورونا"بعض ممالک میں تجارتی سرگرمیاں بحال

دنیا بھر میں اب تک کورونا  سے رونما ہوئی اموات کی تعداد دو لاکھ اڑھتالیس ہزارچھ سو، متاثرین کی تعداد پینتیس لاکھ چوراسی  ہزار ایک سو جبکہ صحت یاب ہوئے افراد کی تعداد  گیارہ لاکھ اکسٹھ ہزار سے بڑھ چکی ہے۔
شمالی قبرص میں وائرس کے باعث تیئس مارچ سے نافذ  جزوی کرفیو ختم کر دیا گیاہے لیکن اب بھی شب نو بجے سے صبح چھ بجے تک کرفیو کا نفاذ    پندرہ مئی تک  جاری رہےگا۔ 
کورونا کے باعث  اردن میں  چار سو اکسٹھ افراد ہلاک اور ایک ہزار تین سو ایک افراد کے اضافے سے متاثرین کی مجموعی تعداد بیس ہزار اکہتر تک جا پہنچی ہے۔ 
دوسری جانب حکومت نے  بدھ کے روز سے حالات معمول پر لانے کا  عندیہ بھی دیا ہے ۔
تھائی لینڈ میں اموات کی تعداد چون اور متاثرین کی دو ہزار نو سو ستاسی ،جنوبی کوریا میں  کورونا سے ہلاک شدگان کی تعداد دو سو باون اور متاثرین کی تعداد دس ہزار آٹھ سو ایک  ہے۔
دوسری جانب،عراقی شہر کرکوک میں کورونا کے باعث دوسری بار  کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے جس کا فیصلہ ملک میں دوبارہ سے کورونا سے متاثرہ افراد کی نشاندہی پر کیا گیا ہے ۔
بھارتی حکومت کا کہنا ہے کہ 4مئی کے بعد مزید 2 ہفتے لاک ڈاؤن جاری رہے گا، جہاں خطرہ کم ہوگا، وہاں لاک ڈاؤن میں نرمی کر دی جائے گی،نئے احکامات کے تحت 17 مئی تک لاک ڈاؤن لاگو رہے گا۔
ایران میں کورونا نے مزید 47 افراد کی جان لے لی جس کے بعد ایران میں کورونا سے اب تک 97 ہزار424 افراد متاثر ہوئے اور ہلاکتوں کی تعداد 6 ہزار دو سو سے بڑھ گئی ہے۔
چین کے لگ بھگ 84 ہزار میں سے 78 ہزار 586 افراد صحتیاب ہوچکے ہیں اور یہ شرح 90 فیصد سے زیادہ ہے۔
جنوبی کوریا میں کورونا کیسوں میں کمی کے بعد تفریحی مقامات پر عوام کاہجوم لگ گیا۔ لوگوں کی بڑی تعداد ساحل سمندر پر بھی جا پہنچی۔ایران میں چند شہروں میں کل سے مساجد کھولنے کا اعلان کر دیا گیا۔
دریں اثناء جاپان کے وزیرِ اعظم شینزو ایبے کا کہنا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ وہ ملک میں ہنگامی حالت کو مزید ایک مہینے کے لیے بڑھا دیں۔
 قازقستان میں  آج سے   متعدد اداروں اور کمپنیوں نے  اپنی سرگرمیاں  بحال کر لی ہیں جبکہ مختلف شہروں کے درمیان پروازوں کا آغاز بھی ہو چکا ہے۔
انڈونیشیا  میں اموات کی تعداد آٹھ سو چونسٹھ،متاثرین کی تعداد گیارہ ہزار پانچ سو  ستاسی، ملائیشیا میں متاثرین کی تعداد چھ ہزار تین سو تریپن  ہے جہاں  انتظامیہ نے  بعض اداروں کو سرگرمیاں بحال کرنے کی اجازت دی ہے۔
دوسری جانب ویت نام میں تین ماہ سے بند تعلیمی ادارےے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

 



متعللقہ خبریں