ترکی کی اقتصادیات نے یورپی  یونین، جی20 اور OECD  کے ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا

یورپی یونین  کے ممالک سے چار گنا زیادہ ترقی کے ساتھ ساتھ ترکی جی 20 کے بھی تیزی سے ترقی کرنے والے ممالک چین اور بھارت  سے بھی آگے نکل گیا

865778
ترکی کی اقتصادیات نے یورپی  یونین، جی20 اور OECD  کے ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا

ترکی کی اقتصادیات  نے دوہرے عدد کی شرح سے ترقی کر کے یورپی  یونین ، جی 20اور اقتصادیاتی ترقی و تعاون تنظیم OECD  کے ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

یورپی یونین  کے ممالک سے چار گنا زیادہ ترقی کے ساتھ ساتھ ترکی  جی 20 کے بھی تیزی سے ترقی کرنے والے ممالک چین اور بھارت  سے بھی آگے نکل گیا ہے۔

ترکی کے محکمہ شماریات ، یورپی شماریاتی دفتر 'یورو اسٹیٹ' اور OECD کے اعداد و شمار سے حاصل کردہ معلومات کے مطابق ترکی کی رواں سال میں 5.2 فیصد ترقیاتی کارکردگی سال کی تیسری تہائی میں دو گنا اضافے کے ساتھ 11.1 تک پہنچ گئی ہے۔

اس کارکردگی کے ساتھ ترکی یورپی یونین ، جی20 اور اوا ی سی ڈی ممالک میں سرفہرست آ گیا ہے۔

ترکی کے مقابلے میں یورپی ممالک نے سال کی دوسری تہائی میں 2.1 فیصد  اور سال کی تیسری تہائی میں 2.5 فیصد ترقی کی ہے۔

اس طرح ترکی نے یورپی ممالک کے مقابلے 4 گنا زیادہ ترقی کی ہے۔

یورپ میں سال کی تیسری تہائی میں سب سے زیادہ ترقی کرنے والا ملک مذکورہ دورانیے میں 8.8 فیصد بڑھوتی کے ساتھ  رومانیہ  رہا۔



متعللقہ خبریں