امریکی قرارداد، پاکستان کے معاملات میں مداخلت ہے جو ناقابل قبول  ہےم دفتر خارجہ

ایک دوسرے کے اندرونی معاملات میں دخل نہ دینے کی پالیسی پر کاربند رہا جائے تو تعلقات بہتر رہتے ہیں۔

2157264
امریکی قرارداد، پاکستان کے معاملات میں مداخلت ہے جو ناقابل قبول  ہےم دفتر خارجہ

پاکستانی دفترخارجہ کا کہنا  ہے کہ امریکی قرارداد پاکستان کے معاملات میں مداخلت ہے جو ناقابل قبول  ہے۔

ترجمان دفترخارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے  میڈیا کو بتایا  کہ پاکستان ایک آزاد اور  خود مختار ریاست ہے۔ امریکی ایوان نمائندگان میں فیصلہ پاکستان کے معاملات میں مداخلت ہے ، جسے ہر گز قبول نہیں کیا جا سکتا۔

ترجمان نے مزید کہا کہ  افسوس سے کہنا پڑتا ہےکہ  امریکی کانگریس نے زمینی حقائق کو جانے بغیر قرارداد منظور کی۔ امریکہ سے ہمارے بہترین دو طرفہ تعلقات ہیں،  ایک دوسرے کے اندرونی معاملات میں دخل نہ دینے کی پالیسی پر کاربند رہا جائے تو تعلقات بہتر رہتے ہیں۔ امریکی کانگریس کو پاک۔ امریکہ تعلقات کی مضبوطی کے لیے  جدوجہد کرنی چاہیے۔ پاکستان امریکہ کے ساتھ تعلقات باہمی اعتماد اور ایک دوسرے کے اندرونی معاملات میں عدم مداخلت کے اصولوں پر رکھنا چاہتا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا کہ پاکستان غزہ سے اسرائیلی فورسز کی فوری واپسی کا مطالبہ کرتا ہے۔ فلسطین پر اقوام متحدہ کی انکوائری رپورٹ میں نہتے فلسطینوں کے قتل کے حوالے سے حیران کن انکشافات کیےگئے ہیں۔ غزہ میں مظالم کو روکنے کا وقت آ چکا ہے۔



متعللقہ خبریں