نیوٹرلز کو کہا تھا، سازش کے تحت حکومت کو گرایا گیا تو سنبھالا نہیں جائے گا: عمران خان

پی ٹی آئی کے زیر اہتمام مہنگائی کے خلاف منعقدہ ملک گیر احتجاجی مظاہروں سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نے ہرچیزکی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کردیا ہے، ہمارے دور میں پیٹرول 12 روپے بڑھا تو انہوں نے لانگ مارچ کیے

1845416
نیوٹرلز کو کہا تھا، سازش کے تحت حکومت کو گرایا گیا تو سنبھالا نہیں جائے گا: عمران خان

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا ہے کہ اپنے حقوق کیلئے باہرنکلنا جہاد ہے، پرامن احتجاج ہمارا جمہوری حق ہے، جدوجہد ہماری بہتری کیلئے ہوتی ہے۔

پی ٹی آئی کے زیر اہتمام مہنگائی کے خلاف منعقدہ ملک گیر احتجاجی مظاہروں سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نے ہرچیزکی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کردیا ہے، ہمارے دور میں پیٹرول 12 روپے بڑھا تو انہوں نے لانگ مارچ کیے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے آتے ہی پیٹرول کی قیمت میں 84 روپے اضافہ کردیا، ڈیزل کی قیمت میں 120 روپے اضافہ کیا گیا، ڈیزل مہنگا ہونے سے کسانوں کو بہت نقصان ہورہا ہے، ہم نے پیٹرول کی قیمت 10 روپے بڑھانے کی بجائے کم کر کے ریلیف دیا تھا۔

عمران خان نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نےغریب عوام کو صحت کارڈ فراہم کیا، غریب عوام 10 لاکھ روپے میں اپنا مکمل علاج کراسکتا تھا، عوام کو احساس راشن کارڈ فراہم کیا، اب بجلی کا بل آئے گا تو سب کو لگ پتہ جائے گا کہ بم پھٹا ہے یا نہیں؟ کسان متاثر ہوگا تو فوڈ سیکیورٹی کا مسئلہ پیدا ہوگا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ کورونابحران کے دوران ہم نے معیشت کو تباہی سے بچایا، فیٹف ایشوپرہمارے دورمیں بہت کام کیا گیا، ہم نےآئی ایم ایف سے معاہدہ کیا لیکن قوم کا خیال رکھا، اس وقت پاکستان کی معیشت تیزی سے نیچے جا رہی ہے، امریکہ سے سازش ہوئی اوریہاں میرجعفراورمیرصادق ساتھ مل گئے، نیوٹرلزکو سازش سے متعلق سمجھایا تھا، میں نے کہا تھا کہ اگرسازش کے تحت حکومت کو گرا دیا گیا تو سنبھالا نہیں جائے گا، شوکت ترین کو کہا تھا کہ ان کوکہہ دیں اورسازش کوناکام بنا دیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں پتہ تھا کہ ان کے پاس قابلیت نہیں ہے یہ صرف اپنے کیسزختم کرنےاقتدارمیں آئے، خرم دستگیر نے ٹی وی پروگرام میں کہا کہ اگرعمران خان رہ جاتا توانہوں نے ہمیں جیلوں میں ڈال دینا تھا، ہم نے اپنے دور میں اداروں کوآزادی سے کام کرنے دیا، خرم دستگیر کی بات سے ثابت ہو گیا کہ یہ صرف این آراوٹو لینے حکومت میں آئے، پہلے ان کومشرف نے این آراو دیا اب ان کواین آراو ٹو مل گیا۔

عمران خان نے کہا کہ جب ہم فیٹف پر قانون سازی کررہے تھے تو اس وقت انہوں نے نیب قانون میں ترمیم لانے کی کوشش کی، جب نیب قانون تبدیل ہو گا تو کل ان کے 1200 ارب کے کرپشن کیسزختم ہوجائیں گے۔ انہوں  نےاستفسار کیا کہ  اگرآپ کوقوم کی فکرہے تو آپ کو 2 ماہ ہوگئے ہیں، روس سے سستا تیل کیوں نہیں خریدا؟ یہ امریکہ کےغلام ہیں اس لیے روس سے سستا تیل نہیں خرید رہے ہیں، ڈالر208 پر پہنچ گیا، خدشہ ہے پاکستان میں سری لنکا جیسے حالات پیدا نہ ہو جائیں، نیب نے ہمارے دور میں 480 ارب روپے ریکورکیے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے پارٹی کے زیر اہتمام منعقدہ ملک گیر احتجاجی مظاہروں سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلاول نے کہا بھارت سے اچھے تعلقات ہونے چاہئیں، ہم نے بھی بھارت سے اچھےتعلقات بنانے کی کوشش کی لیکن جب بھارت نے کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کی توہم نے ناطہ توڑ دیا، اب اگر بھارت سے تعلقات بناتے ہیں تو یہ کشمیریوں سےغداری ہوگی، ان کے مانڈوی والا اسرائیل سے تعلقات بنانے کی بات کرتے ہیں،
یہ سب ایک ایجنڈے کے تحت یہ کام کررہے ہیں، انہوں نے الیکشن کمیشن کو بھی ساتھ ملا لیا ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پنجاب میں ضمنی انتخاب کو ابھی سے فکس کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، کل ہمارے امیدوار کے بیٹے کو گولیاں لگیں جو اس وقت اسپتال میں ہے، سوشل میڈیا ایکٹیوسٹ سمیت صحافیوں کیخلاف کریک ڈاؤن کیا جا رہا ہے، یہ صرف اپنے مفاد کیلئے آئے ہیں، اداروں کوانہوں نے چلنے نہیں دینا،

انہوں نے کہا کہ پرامن احتجاج ہمارا آئینی حق ہے، جب تک صاف اورشفاف الیکشن کا اعلان نہیں ہوتا ہمارا احتجاج جاری رہے گا، پنجاب میں ضمنی انتخاب سے پہلے جو کچھ کیا جا رہا ہے وہ سب کےسامنےہے۔



متعللقہ خبریں