مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف یورپی پارلیمنٹ کا مؤقف خوش آئند ہے

انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں اور بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کو مسلسل بے نقاب کیا

1683176
مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف یورپی پارلیمنٹ کا مؤقف خوش آئند ہے

ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے پریس کو بتایا ہے  کہ مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف یورپی پارلیمنٹ کے ارکان کے خط کا  ہم خیرمقدم کرتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ  اراکین یورپی پارلیمنٹ کا صدر اور نائب صدر یورپی کمشن کو خط عالمی برادری کی جانب سے بھارت کی مذمت و ملامت کرنے کا ایک اور کھلا ثبوت ہے۔مقبوضہ جموں وکشمیر میں حالات ’معمول‘ پر ہونے کا مسلسل بھارتی پراپیگنڈا بے سوداورناکام ثابت ہوا ہے، حالات ”معمول“ پر ہونے کے جھوٹے اور خلاف حقیقت بیانیے کو پھیلانے کے لئے بھارت کا ایڑی چوٹی کا زور کام نہ آیا، مسلسل پراپگنڈے کے باوجود عالمی برادری کی جانب سے بھارت کی مذمت اور ملامتوں کے عمل میں زیر تیزی کا مشاہدہ ہو رہا ہے۔

ترجمان  نے بتایا  کہ 5 اگست 2019 کے بعد سے بالخصوص مقبوضہ کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں ، بہیمانہ جبرواستبداد میں کئی گنا اضافہ ہوا، 5 اگست کے بعد سنگین صورتحال پر سلامتی کونسل میں کم ازکم تین مرتبہ جموں وکشمیر کا مسئلہ زیرغور آچکا ہے۔

زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں اور بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کو مسلسل بے نقاب کیا، یہ حقائق اس سچائی کی گواہی ہیں کہ حالات ”معمول“ پر ہونے کا بھارتی ڈھکوسلا محض دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی  ایک ناکام کوشش  کے علاوہ کچھ نہیں ،  اسے آخر کار بھارت کو عالمی ضمیر اور رائے عامہ کے آگے ہتھیار ڈالنا پڑیں گے۔

 



متعللقہ خبریں