مسئلہ کشمیر پر بھارت نے اقوام متحدہ کی ثالثی کو ٹھکرا دیا

غیر قانونی اور زبردستی پاکستان کے زیر قبضہ علاقوں کو چھڑانے پر بات ہونی چاہیے

1361049
مسئلہ کشمیر پر بھارت نے اقوام متحدہ کی ثالثی کو ٹھکرا دیا

بھارت نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیش کش کو مسترد کرتے ہوئے  دوٹوک الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ"تیسرے فریق کی ثالثی کی کوئی گنجائش نہیں ہے"

واضح رہے کہ سیکریٹری جنرل نے یہ پیش کش ایک روز قبل اسلام آباد میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس  کے دوران کی تھی اور انہوں نے  سلامتی کونسل کی قراردادوں کا احترام کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کے حل کا مطالبہ کیا تھا۔

انہوں نے اپنی  ثالثی کے کردار کی پیش کش کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس مقصد کے  تحت  ان کے ادارے کے موثر دفاتر کو بروئے کار لایا جا سکتا ہے،  انہوں نے پاکستان اور بھارت کے تعلقات پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے عسکری و زبانی کشیدگی کو کم کرنے کی ضرورت پر زور بھی دیا تھا۔

دوسری جانب بھارتی اخبار دی ہندو کی رپورٹ کے مطابق مطابق بھارت نے ان کی اس پیشکش کو گزشتہ شب ہی  مسترد کیا تھا۔

اخبار کے مطابق وزارت امور خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے دعوٰی کیا ک"جموں و کشمیر کے مسئلے پر جس کو توجہ دینے کی ضرورت ہے وہ غیر قانونی اور زبردستی پاکستان کے زیر قبضہ علاقوں کو چھڑانے کا ہے، اگر کوئی مزید امور ہیں تو ان پر  دو طرفہ بحث  ہو گی،  اس میں تیسرے فریق کی ثالثی کا کوئی کردار یا گنجائش نہیں ہے۔



متعللقہ خبریں