وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی دو روزہ سرکاری دورے پر سری لنکا میں، باہمی امور پر بات چیت

وزیر خارجہ (آج) پیر کو سری لنکا کی اعلیٰ قیادت سے ملاقاتیں کریں گے۔ وزیر خارجہ، سری لنکا کے نومنتخب صدر، وزیر اعظم اور وزیر خارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں کریں گے اور منصب سنبھالنے پر مبارکباد دیں گے

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی دو روزہ سرکاری دورے پر سری لنکا میں، باہمی امور  پر بات چیت

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی دو روزہ سرکاری دورے پر سری لنکا پہنچ گئے۔ بندرانائیکے انٹرنیشنل ائیر پورٹ کولمبو پہنچنے پر سری لنکا کی وزارت خارجہ کے ایڈیشنل سیکرٹری ایمبیسڈر پی سلوراج اور پاکستانی ہائی کمیشن کے اعلیٰ حکام نے وزیر خارجہ کا پرتپاک خیرمقدم کیا۔

 وزیر خارجہ (آج) پیر کو سری لنکا کی اعلیٰ قیادت سے ملاقاتیں کریں گے۔ وزیر خارجہ، سری لنکا کے نومنتخب صدر، وزیر اعظم اور وزیر خارجہ سے الگ الگ ملاقاتیں کریں گے اور منصب سنبھالنے پر مبارکباد دیں گے۔ وزیر خارجہ اپنے مختصر دورہ سری لنکا کے دوران میڈیا سے گفتگو بھی کریں گے اور خطے کی صورتحال اور اہم علاقائی امور پر پاکستان کا موقف بیان کریں گے۔ موجودہ صورتحال کے تناظر میں وزیر خارجہ کا دورہ سری لنکا خصوصی اہمیت کا حامل ہےتفصیلات کے مطابق شاہ محمود سرکاری دورے پر سری لنکا پہنچ گئے ہیں، ایئرپورٹ پر سری لنکن وزارت خارجہ کے ایڈیشنل سیکریٹری نے ان کا خیر مقدم کیا، پاکستانی ہائی کمیشن کے حکام بھی موجود تھے جنھوں نے وزیر خارجہ کا پرتپاک استقبال کیا۔

شاہ محمود نے کولمبو ایئر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں وزیر اعظم عمران خان اور صدر ڈاکٹر عارف علوی کا خصوصی پیغام لے کر سری لنکا آیا ہوں، سری لنکا کے نو منتخب صدر اور وزیر اعظم سے ہماری گہری شناسائی ہے، اور وہ پاکستان کے دوست ہیں۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ایک عرصے سے دیرینہ مضبوط مراسم ہیں، دونوں ممالک کے پاس ایک دوسرے سے مستفید ہونے کے مواقع ہیں، پاکستان اور سری لنکا نے باہمی طور پر ہمیشہ ایک دوسرے کی معاونت کی، بین الاقوامی سطح پر بھی دونوں ممالک نے ایک دوسرے کو سپورٹ کیا ہے۔

شاہ محمود نے میڈیا کو بتایا کہ وہ آج سری لنکا کے صدر، وزیر اعظم اور وزیر خارجہ سے ملاقاتیں کریں گے۔

 

 

 

 



متعللقہ خبریں