آرمی چیف کی مدت فرائض میں اضافہ ملکی مفاد میں ہے، وزیر خارجہ

بھارت مقبوضہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لئے پاکستان پر حملے بھی کرسکتا  ہے

آرمی چیف کی مدت فرائض میں اضافہ ملکی مفاد میں ہے، وزیر خارجہ

پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی  نے  اس امید کا اظہار کیا ہے کہ آرمی چیف کے مدت ِ فرائض  میں  توسیع قانون سازی میں اپوزیشن ساتھ دے گی۔

انہوں نے میڈیا کو بتایا  ہے کہ مقبوضہ کشمیر  میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں  بدستور جاری ہیں۔  مسئلہ کشمیر اور بابری مسجد معاملے پر او آئی سی نے ہمارے موقف کی مکمل تائید کی ہے۔بھارتی عدالت کے فیصلے نے  ہم سب کو ٹھیس پہنچائی ہے۔

بھارت  سے درپیش مسائل اور خطے کی صورتحال  سے پوری دنیا کے  آگاہ   ہونے کا ذکر کرتے ہوئے  وزیر کا کہنا تھا کہ  بھارت مقبوضہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لئے پاکستان پر حملے بھی کرسکتا  ہے۔ جس کے پیش نظر  پاک افواج بھارت کے مذموم عزائم کا  ڈت کر مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہیں۔

انہوں نے آرمی چیف کی مدتِ ملازمت میں توسیع سے متعلق  اظہارِ خیال کرتے ہوئے بتایا کہ  یہ فیصلہ  خطے کی صورتحال  کو بالائے طاق رکھتے ہوئے کیا گیا اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع ملکی مفاد میں ۔ ، حکومت نے جو کچھ بھی کیا آئین میں رہتے ہوئے کیا، وزیراعظم نے کابینہ سے مشاورت کی اور ان کا موقف سنا، صدر نے وزیراعظم کی سفارش پر نوٹی فکیشن جاری کیا۔

شاہ محمود نے مزید کہا کہ اس حوالے سے عدالت عظمیٰ نے نشاندہی کی کہ کچھ ابہام ہے جسے دور کرنا لازمی ہے، ہم نے عدالت کے احترام کو ملحوظ خاطر رکھا، تفصیلی فیصلہ آنے کے بعد مشاورت سے اس معاملے کو  آگے بڑھایا جائیگا، امید ہے اپوزیشن قانون سازی میں ساتھ دے گی۔

 



متعللقہ خبریں