مسلم لیگ ن  پنجاب کے صدر اور سابق صوبائی وزیر قانون راناثناء اللہ کو گرفتار کرلیا گیا

اینٹی نارکوٹکس فورس نے حزب مخالف کی جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز کے سینئر رہنما رانا ثنا اللہ کو ’منشیات رکھنے اور منشیات فروشوں کے ساتھ تعلقات رکھنے‘ کے الزام میں گرفتار کیا ہے

1228277
مسلم لیگ ن  پنجاب کے صدر اور سابق صوبائی وزیر قانون راناثناء اللہ کو گرفتار کرلیا گیا

مسلم لیگ ن  پنجاب کے صدر اور سابق صوبائی وزیر قانون راناثناء اللہ کو اینٹی نارکوٹکس فورس (اےاین ایف) نے حراست میں لے لیا۔

 ترجمان اے این ایف نے حراست میں لیے جانے کی تصدیق کردی

مسلم لیگ ن کے رہنما اور پنجاب کے سابق وزیر قانون رانا ثنا اللہ کو انسداد منشیات فورس، اے این ایف نے گرفتار کر لیا ہے۔

اینٹی نارکوٹکس فورس نے حزب مخالف کی جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز کے سینئر رہنما رانا ثنا اللہ کو ’منشیات رکھنے اور منشیات فروشوں کے ساتھ تعلقات رکھنے‘ کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔

رانا ثنا اللہ کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ پارٹی کے اجلاس میں شرکت کے لیے فیصل آباد سے لاہور جا رہے تھے۔

اینٹی نارکوٹکس فورس کا کہنا ہے کہ ’رانا ثنا اللہ کو مصدقہ اطلاعات پر گرفتار کیا گیا اور ان کی ذاتی گاڑی سے منشیات کی ایک خاصی بڑی مقدار برآمد ہوئی ہے‘۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ اے این ایف نے رانا ثنا اللہ کو تفتیش کے لیے نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے۔

ذرایع کا کہنا ہے کہ اے این ایف نے رانا ثنا اللہ کو سکھیکی کے قریب سے حراست میں لیا، اینٹی نارکوٹکس فورس نے یہ کارروائی منشیات فروشوں کے خلاف حالیہ آپریشن کے بعد کی ہے۔

رانا ثنا اللہ کے اہل خانہ نامعلوم مقام پر منتقل ہو گئے، اہلیہ، بیٹی، داماد اور بچے 3 گاڑیوں پر گھر سے روانہ ہوئے، داماد احمد شہریار کو رانا ثنا کا سیاسی جانشین سمجھا جاتا ہے

انا ثنا اللہ کو سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے دور میں بھی اے این ایف نے گرفتار کیا تھا اور اس وقت وہ رکن پنجاب اسمبلی تھے۔ گرفتاری کے دوران رانا ثنا اللہ کی مونچھیں اور بھنویں بھی منڈوا دی گئی تھیں۔

رانا ثنا اللہ پاکستان مسلم لیگ نواز کے پنجاب کے صدر ہیں اور اُنھوں نے اپنی جماعت کے ان اراکین صوبائی اسمبلی کو ’خبردار‘ کیا تھا جنھوں نے چند روز قبل وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔

انا ثنا اللہ کو ریجنل ڈائریکٹوریٹ لاہور یا پنڈی منتقل کیے جانے کا امکان ہے، ذرایع کا کہنا ہے کہ لیگی رہنما کا منشیات کے اسمگلروں کے ساتھ تعلقات کا انکشاف ہوا ہے، اسمگلرز فیصل آباد میں رانا ثنا کے ڈیرے پر بھی پناہ لیتے تھے، رانا ثنا و دیگر افراد کی تفتیش بریگیڈیئر خالد محمود کریں گے۔

ذرایع نے بتایا کہ رانا ثنا اللہ کی گرفتاری منشیات اسمگلر کے تفتیش میں نام اگلنے کے بعد عمل میں آئی ہے، اے این ایف شام تک تفتیشی رپورٹ اعلیٰ حکام کو بھجوائے گی، منشیات اسمگلرز کو گرین سگنل دینے سے لاہور سے اہم گرفتاریاں متوقع ہیں، رانا ثنا کے قریبی ساتھیوں کو بھی اے این ایف گرفتار کرے گی۔



متعللقہ خبریں