وزیراعظم عمران خان آج شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہان مملکت کے اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے

وزیراعظم اجلاس کی دونشستوںسے خطاب کریں گے۔ رہنما مختلف شعبوں میں تعاون کو بڑھانے کے معاہدوں پر دستخط کرنے کے علاوہ کئی فیصلوں کی منظوری دیں گے ۔ اس موقع پر وزیراعظم کانفرنس میں شرکت کرنے والے دیگر رہنمائوں سے دوطرفہ ملاقاتیں کریں گے

وزیراعظم عمران خان آج شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہان مملکت کے اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے

وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہان مملکت کے ہونے والے اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے

وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہان مملکت کے کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں آج (جمعرات) شروع ہونیوالے 19 ویں اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے۔

کرغزستان کے صدرSooronbay Jeenbekov نے وزیراعظم کو دو روزہ اجلاس میں شرکت کی دعوت دی ہے

وزیراعظم اجلاس کی دونشستوںسے خطاب کریں گے۔ رہنما مختلف شعبوں میں تعاون کو بڑھانے کے معاہدوں پر دستخط کرنے کے علاوہ کئی فیصلوں کی منظوری دیں گے ۔ اس موقع پر وزیراعظم کانفرنس میں شرکت کرنے والے دیگر رہنمائوں سے دوطرفہ ملاقاتیں کریں گے۔

شنگھائی تعاون تنظیم کے ارکان اور مبصر ملکوں کے علاوہ اہم بین الاقوامی تنظیموں کے نمائندے بھی اجلاس میں شرکت کریں گے۔پاکستان 2017ء میں شنگھائی تعاون تنظیم کا رکن بننے کے بعد سے امور خارجہ ، دفاع، قومی سلامتی ، معیشت اور تجارت ، تعلیم ، نوجوانوں اور خواتین کوبااختیار بنانے، سیاحت اور ذرائع ابلاغ سمیت تنظیم کے مختلف شعبوں میں بھرپور شرکت کررہا ہے۔

اس سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے گزشتہ مہینے بشکیک میں ہونے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس میں شرکت کی تھی اور فورم نے ان دستاویزات اور فیصلوں پر غور کرکے ان کو حتمی شکل دی جن پر سربراہان مملکت کی کونسل کے اجلاس میں دستخط کئے جائیں گے۔سربراہان مملکت کونسل شنگھائی تعاون تنظیم کا اعلیٰ ترین فورم ہے جو ادارے کے لائحہ عمل ، مستقبل کے منصوبوں اور ترجیحات پر غور کرکے ان کا تعین کرتا ہے۔

شنگھائی تعاون تنظیم کے ارکان اور مبصرملکوں کے علاوہ اہم بین الاقوامی تنظیموں کے نمائندے بھی اجلاس میں شرکت کریں گے۔

اجلاس کے موقع پر 14 جون کو وزیراعظم عمران خان اور روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے مابین ملاقات متوقع ہے جو پاکستان کے لیے بڑی سفارتی کامیابی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان شنگھائی تعاون تنظیم کا رکن بننے کے بعد سے امور خارجہ، دفاع، قومی سلامتی، معیشت اور تجارت، تعلیم، نوجوانوں اور خواتین کو بااختیار بنانے، سیاحت اور ذرائع ابلاغ سمیت تنظیم کے مختلف شعبوں میں بھرپور شرکت کررہا ہے۔

 



متعللقہ خبریں