امریکہ ہم سے عزت و تمیز کے دائرے میں بات کرے، عمران خان

وزیراعظم نے کہا کہ میرے اوپر کسی قسم کا اور کسی بھی ادارے کی طرف سے کوئی دباؤ نہیں ، ہم فوج کے ساتھ مل کرآئین کے مطابق کام کررہے ہیں

1041205
امریکہ ہم سے عزت و تمیز کے دائرے میں بات کرے، عمران خان

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ امریکہ کے حوالے سے وہ اپنے مؤقف پر اب بھی قائم دائم  ہیں،  اگر اس ملک نے ہم سے  بات کرنی ہے تو عزت کے دائرے میں  کرے۔

وزیراعظم ہاؤس میں اخباری نمائندوں کو بریفنگ دیتے  ہوئے  وزیراعظم عمران خان نے بتایا کہ  بدعنوانیوں اور خرد برد کے مقدمات  چلانے پر شور  شرابا ہو گا  لہذا اس حوالے سے  میڈیا  کو ہمارا ساتھ دینا ہو گا  اور ان  مقدمات  میں جو بھی پکڑا گیا میڈیا  کو چاہیے کہ وہ کسی پراپیگنڈا کا حصہ نہ بنے۔

وزیر اعظم  کا کہنا تھا کہ میں  اپنے نقطہ نظر  کو آگے بڑھاؤں گا، عوامی منصوبے شروع کیے جائینگے  اور پاکستان کا  پیسہ  دیس میں واپس لانے کے لیے اقدامات  اٹھائیں جائیں گے ، اسوقت ہمارے اندرونی حالات ایسے نہیں کہ غیرملکی دورے کروں۔

انہوں  نے بتایا  کہ ہم  بھارت سے اچھے تعلقات  استوار  کرنے کی کوشش میں ہیں،  تاہم بھارت کی جانب سے فی الحال کوئی  مثبت ردعمل سامنے  نہیں آیا جب کہ نوجوت سدھو کو بلانے کا مقصد بھی یہی تھا کہ وہ واپس جا کر لوگوں کو اعتماد میں لیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ وہ  امریکہ کے حوالے سے وہ اپنے مؤقف پر اب بھی  اٹل ،  اگر یہ ملک ہمارے سات روابط چاہتا ہے تو اسے عزت اور تمیز کے دائرے میں  بات کرنی ہو گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ میرے اوپر کسی قسم کا اور کسی بھی ادارے کی طرف سے کوئی دباؤ نہیں ، ہم فوج کے ساتھ مل کرآئین کے مطابق کام کررہے ہیں۔

صحافیوں سے ملاقات کے دوران فرانسیسی صدر کی 2 بار ٹیلی فون کال بھی آئی جس پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وہ ابھی مصروف ہیں بعد میں بات کریں گے۔

ان دونوں  سربراہان کی ٹیلی فون پربات چیت بعد میں سر انجام پا گئی تا ہم اس حوالے سے کوئی  معلومات  فراہم نہیں کی گئیں۔

 



متعللقہ خبریں