سندھ میں بلاول بھٹو نئے عظم کے ساتھ نئی حکومت تشکیل دینے کی کوششوں میں

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے انتخابی منشور کی روشنی میں اہداف طے کر لیے ہیں، جن کے مطابق صحت اور تعلیم کے شعبے میں انقلابی اصلاحات کرنا ہوں گی، جب کہ سفارش کلچر کا خاتمہ اور میرٹ کو فروغ دینا بھی سندھ کی نئی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہو گا

سندھ میں بلاول بھٹو    نئے عظم کے ساتھ  نئی حکومت تشکیل دینے کی کوششوں میں

پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے سندھ میں حکومت تشکیل دینے کے لیےمشاورات  کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔ انہوں نے  سندھ میں نئی حکومت تشکیل دینے کے لیے متوقع  وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کو 6 ماہ میں اہداف پر بڑی پیش رفت کا ہدف دے دیا ہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے انتخابی منشور کی روشنی میں اہداف طے کر لیے ہیں، جن کے مطابق صحت اور تعلیم کے شعبے میں انقلابی اصلاحات کرنا ہوں گی، جب کہ سفارش کلچر کا خاتمہ اور میرٹ کو فروغ دینا بھی سندھ کی نئی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہو گا۔ اس کے علاوہ اہداف میں زراعت میں انقلابی اصلاحات، صاف پانی کی فراہمی بھی شامل ہیں، جب کہ نوجوانوں کو روزگار دینے کے لیے بھی بلاول بھٹو نے منصوبہ بنا لیا ہے ۔

ذرائع کے مطابق پی پی چیئرمین نے سندھ حکومت کو کہہ دیا ہے کہ پارٹی منشور کے مطابق فلاحی پروگرام تیار کریں،حکومت میں آتے ہی صحت اور تعلیم کے شعبے میں انقلابی اصلاحات کرنا ہوگی۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سندھ میں بنیادی تعلیم سے یونیورسٹی تک تعلیم مفت کرنے کا منصوبہ بنایا جائے،یونین کونسل سطح تک صحت کی تمام بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں۔

بلاول بھٹو نے ان تمام اہداف میں بڑی حد تک پیشرفت کے لئے 6 ماہ کا وقت دیدیا ہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے نامزد وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کو اپنی ترجیحات سے آگاہ کر دیا ہے اور انہیں 6 ماہ میں اہداف پر بڑی پیشرفت کا ہدف دے دیا گیا ہے ۔



متعللقہ خبریں