چشمہ امن آپریشن

مقصد امن
ہدف دہشت گردی

پاناما لیکس مقدمے کے فیصلے سے قبل حکومت پاکستان کے تدابیری اقدامات

اگر سپریم کورٹ پاناما لیکس مقدمے  میں ممکنہ طور پر وزیر اعظم نواز شریف کو نااہل قرار دے دیتا ہے  تو وہ  فی الفور  اپنے عہدے سے سبکدوش ہوجائیں گے، مسلم لیگ (ن)

پاناما لیکس مقدمے کے  فیصلے سے قبل حکومت پاکستان کے تدابیری اقدامات

حکومت پاکستان نے  پاناما لیکس کیس کا متوقع فیصلہ ممکنہ طور پر وزیر اعظم کی نااہلی کی صورت میں ہونے   پر بعض اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس حوالے سے  تفصیلی مشاورت کے بعد ممکنہ طور پر3 متبادل پر  مشتمل  ایک  حکمت ِعملی ترتیب دی گئی ہے۔

جس کے تحت وزیر اعظم کی فوری طور پراپنے عہدے سے سبکدوشی، نئے وزیراعظم کی 48 گھنٹے میں تقرری اورقانونی مشاورت کے بعد اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کرنا یا نہ کرنا   جیسے   نکات پر غور کیا جا رہا ہے۔

 پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر سپریم کورٹ پاناما لیکس مقدمے  میں ممکنہ طور پر وزیر اعظم نواز شریف کو نااہل قرار دے دیتا ہے  تو وہ  فی الفور  اپنے عہدے سے سبکدوش ہوجائیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاناما لیکس کیس کا متوقع فیصلہ ممکنہ طور وزیراعظم نواز شریف کے خلاف آنے کی صورت ان کی قانونی ٹیم تفصیلی فیصلے کا جائزہ لے گی ۔جس کے بعد قانونی ٹیم کی مشاورت اور رائے کی روشنی میں اس فیصلے کے خلاف اپیل سپریم کورٹ میں دائر کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا ۔

 



متعللقہ خبریں