چشمہ امن آپریشن

مقصد امن
ہدف دہشت گردی

پاکستان کا مجموعی اقتصادی استحکام اور ترقی قابلِ تعریف ہے: چیف ایگزیکٹوعالمی بینک

وزیراعظم محمد نواز شریف نے امید ظاہر کی ہے کہ عالمی بینک ثالثی عدالت کے قیام کے ذریعے پن بجلی منصوبوں کی تعمیر کے حوالہ سے پاکستان اور بھارت کے درمیان پیدا ہونے والے تنازعات کے حل میں اپنا نمایاں کردار ادا کرے گا

پاکستان کا مجموعی اقتصادی استحکام اور ترقی قابلِ تعریف ہے: چیف ایگزیکٹوعالمی بینک

وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ حکومت توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے دریائے سندھ پر بڑے ڈیم اور بلوچستان میں چھوٹے اور درمیانے ڈیم تعمیر کرے گی۔
وہ جمعرات کے روز اسلام آباد میں عالمی بینک کی چیف ایگزیکٹو آفیسرک کرسٹا لینا آئی جورجیوا کی  قیادت میں ایک وفد سے گفتگو کررہے تھے۔

 وزیراعظم محمد نواز شریف نے امید ظاہر کی ہے کہ عالمی بینک ثالثی عدالت کے قیام کے ذریعے پن بجلی منصوبوں کی تعمیر کے حوالہ سے پاکستان اور بھارت کے درمیان پیدا ہونے والے تنازعات کے حل میں اپنا نمایاں کردار ادا کرے گا۔

 انہوں نے یہ بات جمعرات کو عالمی بینک گروپ کی چیف ایگزیکٹو آفیسر کرسٹا لینا آئی جورجیوا سے وزیراعظم ہاؤس  میں گفتگو کرتے ہوئے۔ وزیراعظم نے بھارت کی طرف سے سندھ طاس معاہدہ 1960ءجس پر عالمی بینک دستخط کنندہ ہے، کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہائیڈرو الیکٹرک پلانٹس خاص طور پر کشن گنگا اور ریتلے پن بجلی منصوبوں اور مغربی دریاؤں پر آبی ذخائر کی تعمیر کے حوالہ سے پاکستان اور بھارت کے درمیان پیدا ہونے والے تنازعات کے تصفیہ پر تبادلہ خیال کیا۔

عالمی بینک کی سی ای او کے پہلے دورہ پاکستان کا خیرمقدم کرتے ہوئے وزیراعظم نے انہیں تقرری پر مبارکباد دی۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان 1952ءسے اپنی عالمی بینک کے ساتھ اپنی شراکت داری کو بہت اہمیت دیتا ہے اور اس کی سماجی، بنیادی ڈھانچہ، پانی اور توانائی کے شعبوں میں 1952ءسے اب تک 31 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کو سراہا۔
وزیراعظم نے کہا کہ دیامر بھاشا ڈیم قومی اہمیت کا منصوبہ ہے کیونکہ اس سے انرجی مکس میں تبدیلی آئے گی ، سستی بجلی پیدا ہوگی اور پانی کو ذخیرہ کیا جاسکے گا۔
انہوں نے کہا کہ حکومت کو معاشی بحالی اور توانائی، بنیادی ڈھانچے اور سماجی تحفظ کے شعبوں میں بڑی سرمایہ کاری کیلئے ترقیاتی شراکت داروں کا تعاون درکار ہے۔ ا نہوں نے عالمی بینک پرزور دیا کہ وہ ثالثی عدالت کے قیام کے ذریعے پاکستان او ر بھارت کے درمیان پانی کے تنازعات کے حل میں نمایاں کردار اداکرے۔
وزیراعظم نے عارضی بے گھر افراد کی واپسی اور بحالی کے لئے ساڑھے سات کروڑ ڈالر فراہم کرنے پر عالمی بینک کا شکریہ ادا کیا اور بتایا کہ عارضی بے گھر افراد کی واپسی کا عمل تیزی سے جاری ہے انہوں نے کہا کہ حکومت عارضی بے گھر افراد کی بحالی کیلئے بھی اپنے بجٹ سے بڑے وسائل خرچ کررہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان تربیلا فور، تربیلا فائیو اور داسو پن بجلی منصوبوں سمیت توانائی کے شعبے کے منصوبوں میں بینک کے تعاون کو سراہتاہے۔
کریسلینا جیورجیوا  نے توانائی، بنیادی ڈھانچے اور مجموعی اقتصادی استحکام میں پاکستان کی شاندار ترقی کی تعریف کی ، انہوں نے کہا کہ عالمی بینک ایسے تمام اقدامات کی حمایت کرے گا جن کا مقصد پائیدار اقتصادی شرح کو یقینی بنانا ہے۔



متعللقہ خبریں