عمران خان نے پارلیمنٹ کا بائیکاٹ ختم کردیا، وزیراعظم کےخلاف تحریک استحقاق قومی اسمبلی میں جمع کرادی

تحریک انصاف کی جانب سے جمع کرائی گئی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم نے پاناما لیکس کے معاملے پر اسمبلی میں جھوٹ بولا جس سے ایوان کا استحقاق مجروح ہوا

629991
عمران خان نے پارلیمنٹ کا بائیکاٹ ختم کردیا، وزیراعظم کےخلاف تحریک استحقاق قومی اسمبلی میں جمع کرادی

پاکستان تحریک انصاف (پی آٹی آئی) نے پارلیمنٹ کا بائیکاٹ ختم کرتے ہوئے وزیراعظم میاں نواز شریف کے خلاف پارلیمنٹ میں تحریک استحقاق اور تحریک التواء پیش کرنے کا اعلان کردیا۔

تحریک انصاف نے وزیراعظم نواز شریف کے خلاف تحریک استحقاق قومی اسمبلی میں جمع کرادی ہے۔

تحریک انصاف کی جانب سے جمع کرائی گئی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم نے پاناما لیکس کے معاملے پر اسمبلی میں جھوٹ بولا جس سے ایوان کا استحقاق مجروح ہوا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز ہی تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے قومی اسمبلی کا بائیکاٹ ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایوان میں تالیاں بجانے نہیں اپنی بات کرنے جائیں گے۔

پاکستان تحریک انصاف (پی آٹی آئی) نے پارلیمنٹ کا بائیکاٹ ختم کرتے ہوئے وزیراعظم میاں نواز شریف کے خلاف پارلیمنٹ میں تحریک استحقاق اور تحریک التواء پیش کرنے کا اعلان کردیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کی جماعت بدھ (آج) کو پارلیمنٹ میں وزیراعظم کے خلاف دو تحریکیں جمع کرائے گی۔

عمران خان نے کہا کہوزیر اعظم نے پارلیمنٹ میں دو جھوٹ بولے، پہلا یہ کہ گلف اسٹیل کو بیچ کر جو نفع ملا اس سے مے فیئر کے فلیٹ لیے گئے لیکن ہم نے عدالت میں ثابت کردیا کہ گلف اسٹیل مل تو 26 لاکھ درہم کے نقصان میں چل رہی تھی تو مے فیئر فلیٹ کیسا خریدا گیا‘؟

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ’اپوزیشن کی جانب سے مئے فیئر فلیٹس اور پانامہ کی کمپنیوں کے حوالے سے جواب طلب کرنے پر حکومت نے کہا تھا کہ ہمارے پاس تمام دستاویز موجود ہیں اور جب چاہیں آمدنی کے ذرائع کی تفصیلات پیش کردیں گے‘۔

واضح رہے کہ تحریک انصاف طویل عرصے سے پارلیمنٹ کا بائیکاٹ کیے ہوئے ہے، رواں برس اکتوبر میں بھارتی جارحیت اور کشمیر کے معاملے پر ہونے والے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں بھی پی ٹی آئی نے شرکت سے انکار کردیا تھا۔

اس کے بعد نومبر میں ترک صدر رجب طیب ایردوان کی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں بھی پی ٹی آئی نے شرکت نہیں کی تھی۔

گزشتہ ماہ چیئرمین پی ٹی آئی نے یہ بھی کہا تھا کہ جب تک سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کا کیس چل رہا ہے تب تک وہ پارلیمنٹ میں نہیں جائیں گے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ ایک مجرم ملک کا وزیراعظم نہیں ہوسکتا۔



متعللقہ خبریں