پاک ۔ ہند کشیدگی میں اضافہ، لائن آف کنٹرول پر دو طرفہ فائرنگ کا تبادلہ

جھڑپوں کے حوالے سے  ایک دوسرے پر  الزام تراشی کرنے والے   طرفین  نے     اپنی اپنی سرحدوں کا  تحفظ کرنے کا دفاع کیا ہے

579963
پاک ۔ ہند  کشیدگی میں اضافہ، لائن آف کنٹرول پر دو طرفہ  فائرنگ کا تبادلہ

 

پاکستان   اور ہندوستان کے درمیان   سالہا  سال سے    جاری مسئلہ کشمیر   میں   تناؤ   بام عروج پر ہے۔

 ایک انڈین  بیس پر  رواں ماہ  کے  اوائل میں         ہونے والے حملے کہ جس میں  18 فوجی   ہلاک ہو گئے  تھے   کے بعد کل   دو طرفہ  فائرنگ کا  تبادلہ ہوا  جس سے      دو پاکستانی       فوجی ہلاک  ہو گئے۔

پاکستان      میں    کشمیر    کی سرحدوں   کو پار کرنے والے ایک ہندوستانی فوجی پکڑا گیا ہے،     جھڑپوں کے حوالے سے  ایک دوسرے پر  الزام تراشی کرنے والے   طرفین  نے     اپنی اپنی سرحدوں کا  تحفظ کرنے کا دفاع کیا ہے۔

یہ کشیدگی   سفارتی تعلقات  کو بھی متاثر کر رہی ہے،  پاکستان  نے  اسلام آباد میں متعین   ہندوستانی     سفیر    کو دفترِ خارجہ طلب کرتے ہوئے  کہا  ہے کہ "اگر  ہندوستان  سے دوبارہ کوئی حملہ ہوا   تو پاکستان اس کا  منہ توڑ  جواب دے گا۔

ادھر امریکی    انتظامیہ نے خطے میں تناؤ میں  کمی لائے جانے کی اپیل کی ہے۔

وائٹ ہاؤس کے ترجمان جوش ارنسٹ نے    ان دونوں ملکوں کو  تحمل سے کام لینے  کی  تلقین کی ہے۔

امریکی صدر کی قومی   سلامتی   امور کی مشیر   سوزان رائس    کے اپنے  ہندوستانی ہم منصب سے ملاقات کرنے کی وضاحت کرنے والے   ارنسٹ نے  بتایا کہ   اس حوالے سے پاکستانی حکام   کے ساتھ ملاقاتوں کا سلسلسہ  جاری ہے۔

واضح رہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان   ، کشمیر  کے حوالے سے کہ جس کی آبادی کا ایک بڑا حصہ مسلمانوں پر مشتمل ہے   کے  معاملے میں   گزشتہ    60  سالوں سے زائد عرصے   سے     کشیدگی جاری ہے۔



متعللقہ خبریں