پاکستان افغانستان کیخلاف اپنی سرزمین استعمال نہیں کرنے دے گا: جنرل راحیل شریف

جنرل راحیل شریف نے کہا کہ تمام دہشت گردوں کے خلا ف کارروائیاں جاری رہیں گی۔ انہوں نے یہ بات بدھ کو شمالی اورجنوبی وزیرستان ایجنسیوں کے اگلے مورچوں کے دورے کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہی جہاںانہوں نے شوال کے علاقے میں عید الفطر کی نماز اداکی

پاکستان افغانستان کیخلاف اپنی سرزمین استعمال نہیں کرنے دے گا: جنرل راحیل شریف

بری فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے عزم ظاہرکیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں میں حاصل کیے گئے ٹھوس نتائج کے باعث دہشت گردوں کو دوبارہ منظم نہیں ہونے دیا جائے گا۔
انہوں نے یہ بات بدھ کو شمالی اورجنوبی وزیرستان ایجنسیوں کے اگلے مورچوں کے دورے کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہی جہاںانہوں نے شوال کے علاقے میں عید الفطر کی نماز اداکی اور جوانوںسے عید ملے۔
بری فوج کے سربراہ نے کہا کہ فاٹا سے دہشت گردوں کاخاتمہ کر دیاگیاہے اور وہ اب بھاگ رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ قوم اور دلیر فوج نے دہشت گردوںکے خاتمے اورملک میں امن کی بحالی کی بھاری قیمت اداکی ہے انہوں نے کہا کہ ان قربانیوں کو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا۔
جنرل راحیل شریف نے کہا کہ تمام دہشت گردوں کے خلا ف کارروائیاں جاری رہیں گی۔
انہوںنے کہا کہ پاکستان کسی کو بھی افغانستان کے خلاف اپنی سرزمین استعمال نہیں کرنے دے گا۔
بری فوج کے سربراہ نے کہا کہ پاک افغان سرحد پر امن واستحکام ہماری ترجیح ہے انہوں نے کہا کہ سرحدی انتظام اور افغان پناہ گزینوں کی باوقار واپسی پائیدار امن کیلئے ناگزیرہیں۔
انہوں نے کہا کہ افغانستان میں امن کے لئے ہماری کوششوں کو تسلیم کیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے عزم و اخلاص کے ساتھ مفاہمتی عمل میں سہولت کا تہیہ کر رکھا ہے اور ہم توقع کرتے ہیں کہ افغانستان کی سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال نہیں ہوگی۔
جنرل راحیل شریف کو کور کمانڈر اور فارمیشن کمانڈر نے دہشت گردی کے خاتمے کے بارے میں آپریشن کی تفصیلی بریفنگ دی جو آپریشن ضرب عضب اور آپریشن کے بعد سیکورٹی کی صورتحال کا حصہ ہے۔



متعللقہ خبریں