نوٹیفیکشن کے بعد تحریک انصاف نے پارلیمنٹ میں جانے کا فیصلہ کرلیا

پاکستان تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے معاملے پر حکومت کے ساتھ تمام معاملات طے ہو گئے ہیں لیکن قومی اسمبلی میں واپسی کا فیصلہ عدالتی کمیشن کے نوٹیفکیشن کے بعد کیا جائے گا۔ فیصلہ کور کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا

276485
نوٹیفیکشن کے بعد تحریک انصاف نے پارلیمنٹ میں جانے کا فیصلہ کرلیا

پاکستان تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے معاملے پر حکومت کے ساتھ تمام معاملات طے ہو گئے ہیں لیکن قومی اسمبلی میں واپسی کا فیصلہ عدالتی کمیشن کے نوٹیفکیشن کے بعد کیا جائے گا۔
اس بات کا فیصلہ اتوار کو تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی قیادت میں اسلام آباد میں ہونے والے کور کمیٹی کے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس تمام پارٹی عہدے تحلیل کرنے اور دوبارہ انتخابات کروانے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔
گزشتہ روز حکومت کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد تحریک انصاف کی کور کمیٹی کا اجلاس آج اسلام آباد میں منعقد ہوا جس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ان کی جماعت جوڈیشل کمیشن کے قیام کا نوٹیفکیشن آنے تک اسمبلیوں میں نہیں جائے گی۔
شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا نوٹیفکیشن جاری ہونے کے بعد اجلاس میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔
انہوں نے بتایا کہ کور کمیٹی کے اجلاس میں پارٹی انتخابات پر جسٹس ریٹائرڈ وجیح الدین کی سفارشات بھی تسلیم کرلی گئی ہیں اور عمران خان جلد پارٹی الیکشن کے لئے کمیشن تشکیل دیں گے۔
انہوں نے کہا کہ عمران خان ہی انٹرپارٹی انتخابات کی تاریخ کا بھی اعلان کریں گے۔
شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف جمہوری قدروں کو فروغ دینا چاہتی ہے اور ملک میں شفاف انتخابات کی بنیاد رکھنے کی خواہشمند ہے۔
تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے اجلاس میں عارف علوی، شفقت محمود، شیریں مزاری، اسد عمر اور پرویز خٹک سمیت دیگر رہنما شامل ہیں۔


ٹیگز:

متعللقہ خبریں