غزہ میں اسرائیل کے حملوں میں بچوں سمیت 15 فلسطینی جاں بحق اور 22 زخمی

نصرت پناہ گزین کیمپ میں ایک مکان پر اسرائیلی حملے میں 7 فلسطینی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے اور کچھ زخمی ہوگئے ہیں

2161028
غزہ میں اسرائیل کے حملوں میں بچوں سمیت 15 فلسطینی جاں بحق اور 22 زخمی

غزہ کے مختلف علاقوں پر اسرائیل کے حملوں میں بچوں سمیت 15 فلسطینی جاں بحق اور 22 زخمی  ہو چکے ہیں ۔

نصرت پناہ گزین کیمپ میں ایک مکان پر اسرائیلی حملے میں 7 فلسطینی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے اور کچھ زخمی ہوگئے ہیں ۔

کیمپ کے شمال میں واقع فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی (UNRWA) کے ایک اسکول میں فائرنگ کے نتیجے میں وہاں پناہ لینے والے 13 فلسطینی زخمی ہوگئے ہیں ۔

دیر بیلہ شہر میں ایک گھر پر ایک اور حملے میں ماں اور اس کے بچے سمیت 3 افراد جان کی بازی ہار گئے اور متعدد افراد زخمی  ہوئے ہیں۔

اسرائیلی فوج غزہ شہر کے ساتھ ساتھ رفح اور شمالی علاقوں پر اپنے زمینی اور فضائی حملے تیز کر رہی ہے۔

اسرائیلی فوج متعدد بار بے گھر ہونے والے فلسطینیوں کو ایک بار پھر ہجرت پر مجبور کر رہی ہے۔

غزہ میں فلسطینی وزارت صحت کی جانب سے جاری کیے گئے تحریری بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی فوج نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران غزہ کے مختلف علاقوں میں 3 "قتل عام" کیے جس کے نتیجے میں مزید 50 فلسطینی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے اور 130 فلسطینی زخمی  ہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ 7 اکتوبر 2023 سے غزہ کی پٹی پر اسرائیل کے حملوں میں ہلاکتوں کی تعداد 38 ہزار 243 اور زخمیوں کی تعداد 88 ہزار 33 ہو گئی ہے۔

بیان میں اس بات کا بھی اعادہ کیا گیا کہ ملبے کے نیچے اور سڑک کے کنارے اب بھی لاشیں موجود ہیں لیکن اسرائیلی رکاوٹوں کے باعث طبی ٹیمیں اور شہری دفاع کے اہلکار لاشوں تک نہیں پہنچ سکے ہیں ۔



متعللقہ خبریں