لیبیا کا عرب لیگ کے خلاف شدید ردِ عمل

مینگوش  نے کہا کہ عرب لیگ کو 14 ممالک کو تحریری طور پر اجلاس میں شرکت  کرنے  کی شرط عائد  کی گئی تھی جس  نے بہت سے ممالک کو شرکت کرنے میں ہچکچاہٹ کا شکار بنادیا

1936422
لیبیا کا عرب لیگ کے خلاف شدید ردِ عمل

لیبیا کے وزیر خارجہ نجلہ  مینگوش نے کہا کہ گزشتہ روز دارالحکومت طرابلس میں عرب وزرائے خارجہ کے مشاورتی اجلاس میں شرکت مطلوبہ سطح پر  نہ ہونے پر وہ حیران ہیں۔

اجلاس کے  بعد منعقدہ پریس کانفرنس میں، مینگوش نے کہا کہ عرب لیگ کے سیکرٹریٹ نے یونین کے ضوابط اور قوانین میں   جگہ نہ پانے والی شرط کو سامنے رکھا ہے۔

مینگوش  نے کہا کہ عرب لیگ کو 14 ممالک کو تحریری طور پر اجلاس میں شرکت  کرنے  کی شرط عائد  کی گئی تھی جس  نے بہت سے ممالک کو شرکت کرنے میں ہچکچاہٹ کا شکار بنادیا۔

مینگوش نے کہا کہ  یونین نے ایک عرب ملک  کی پالیسی کے ساتھ قریبی موقف اختیار کیا، انہوں نے کہا کہ  اجلاس میں شرکت نہ کرنے والے متعددد ممالک کے رویے سے متعلق انہیں شکایت ہے ۔ متعلقہ ملک  کی جانب سے تعاون نہ کیے جانے پر  انہیں حیرانگی ہوئی ہے۔

مینگوش نے  کہا کہ  علاقائی مسائل اور عرب ممالک کی صورتحال نے بھی شرکت کی کم شرح میں اہم کردار ادا کیا ہے ۔

انہون نے کہا کہ اس کے باوجود  وہ طرابلس میں ہیں اور  کامیابی کے ساتھ مشاورتی اجلاس منعقد کیا ہے۔

لیبیا کی وزارت خارجہ کی طرف سے دارالحکومت طرابلس میں منعقدہ عرب وزرائے خارجہ کے مشاورتی اجلاس میں 10 ممالک نے شرکت کی۔

لیبیا کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے عبد الولیٰ باتھلی  بھی اس کانفرنس میں موجود تھے ، اس اجلاس میں  لیبیا، الجزائر، تیونس اور قطر  کے وزراء نے شرکت کی تو صومالیہ، کوموروس، فلسطین، سوڈان، عمان اور موریطانیہ ن کے مستقل نمائندوں یا سفیروں نے  اپنے اپنے ملک کی نمائندگی کی۔



متعللقہ خبریں