شام: اسد انتظامیہ نے PKK/YPG کے لئے پیٹرول کی ترسیل بند کر دی

بشار الاسد انتظامیہ نے، علیحدگی پسند دہشت گرد تنظیم PKK/YPG کے زیرِ کنٹرول محلّوں،  شیخ مقصود اور اشرافیہ  کے لئے پیٹرول کی ترسیل منقطع کر دی

1911944
شام: اسد انتظامیہ نے PKK/YPG کے لئے پیٹرول کی ترسیل بند کر دی

شام میں بشار الاسد انتظامیہ نے، شمالی حلب کے مرکز میں علیحدگی پسند دہشت گرد تنظیم PKK/YPG کے زیرِ کنٹرول محلّوں،  شیخ مقصود اور اشرافیہ  کے لئے پیٹرول کی ترسیل منقطع کر دی ہے۔

مقامی ذرائع سے موصول معلومات کے مطابق اسد انتظامیہ نے 18 ستمبر کو حلب  میں PKK/YPG کے زیر کنٹرول محلّوں شیخ مقصود اور اشرافیہ میں تنظیم کی نام نہاد انتظامیہ کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

تنظیم کی طرف سے اس طلب کو رد کئے جانے کے بعد انتظامی فورسز نے 26 نومبر سے شیخ مقصود اور اشرافیہ میں پیٹرول کا داخلہ ممنوع کر دیا ہے۔

پیٹرول بحران کی وجہ سے مذکورہ محلّوں میں الیکٹرک جنریٹروں کی ایک بڑی تعداد بند ہو گئی ہے۔

واضح رہے کہ اسد انتظامیہ نے 2012 میں، عوامی تحریکوں اور مسلح مزاحمت کے سدّباب کے لئے ، انتظامیہ مخالف مسلح کاروائی نہ کرنے کی شرط پر ملک کے شمال میں بعض علاقوں کو PKK/YPG کے کنٹرول میں دے دیا تھا۔ اس طرح دہشت گرد تنظیم نے حلب کے مرکز میں مذکورہ محّلوں میں پاوں جمانا شروع کر دئیے تھے۔

2016 میں شامی انتظامیہ اور روس کے، حلب کا محاصرہ کر کے، شہر کو قبضے میں لینے  کے دوران دہشت گرد تنظیم نے شیخ مقصود محّلے سے اسٹریٹجک تعاون فراہم کیا تھا۔

یاد رہے کہ انتظامیہ  حلب کے مرکز میں دہشت گرد تنظیم PKK/YPG کی موجودگی کو نظر انداز کر رہی ہے جس کے جواب میں تنظیم بھی حاسیکہ کے بعض مقامات میں  انتطامیہ کی موجودگی کی اجازت دے رہی ہے۔



متعللقہ خبریں