سعودی عرب اور یو اے ای حوثیوں کے بیلسٹک میزائلوں کی زد میں

عرب لیگ کے اجلاس کے اختتامی بیان میں شہریوں اور شہری اہداف کے خلاف حوثیوں کے حملوں کی مذمت کی گئی

1767805
سعودی عرب اور یو اے ای حوثیوں کے بیلسٹک میزائلوں کی زد میں

یمن کے حوثیوں  نے سعودی عرب  اور متحدہ عرب امار ت کو دوبارہ سے بیلسٹک میزائلوں کے ذریعے  ہدف بنایا ہے۔

ان ایام میں جب امریکہ اور اقوام یمن کے بحران کے سیاسی حل کے عمل کو دوبارہ شروع کرنے کی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہیں، حوثیوں نے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات پر اپنے حملوں میں اضافہ کر دیا ہے۔

عرب لیگ نے متحدہ عرب امارات کی درخواست پر مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں مستقل نمائندوں کی سطح پر ایک غیر معمولی اجلاس منعقد کیا جس میں 17 جنوری کو متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظہبی پر حوثیوں کی جانب سے کیے گئے حملوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

عرب لیگ کے اجلاس کے اختتامی بیان میں شہریوں اور شہری اہداف کے خلاف حوثیوں کے حملوں کی مذمت کی گئی۔

بیان میں زور دیا گیا ہے کہ حوثیوں کے حملے بین الاقوامی قانون اور بین الاقوامی انسانی قوانین کی واضح خلاف ورزی کرتے ہیں، ہم  "تمام ممالک سے حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے" کا مطالبہ کرتے ہیں۔

جیسے ہی حوثیوں نے متحدہ عرب امارات پر اپنے حملوں میں اضافہ کیا، عرب اتحاد کے جنگی طیاروں نے دارالحکومت صنعا کے ساتھ ساتھ حوثیوں کے زیر کنٹرول علاقوں پر بمباری تیز کردی۔

متحدہ عرب امارات کی وزارت دفاع کی جانب سے آج جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں کی جانب سے دارالحکومت ابوظہبی پر بھیجے گئے دو بیلسٹک میزائلوں کو فضائی دفاعی نظام نے ناکارہ بنا دیا ہے۔



متعللقہ خبریں