یورپی ممالک کی طرف سے لیبیا مِں قومی اتحادی حکومت کے ساتھ تعاون

لیبیا میں قائم کی جانے والی قومی اتحادی حکومت کے ساتھ یورپی ممالک کی طرف سے اوپر تلے تعاون کا اظہار

472537
یورپی ممالک کی طرف سے لیبیا مِں قومی اتحادی حکومت کے ساتھ تعاون

لیبیا میں قائم کی جانے والی قومی اتحادی حکومت نے اگرچہ تاحال ملک کی دیگر دو انتظامیہ کی منظوری حاصل نہیں کی تاہم یورپی ممالک کی طرف سے اوپر تلے حکومت کے ساتھ تعاون کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

اٹلی کے بعد جرمنی اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے بھی طرابلس کا ہنگامی دورہ کر کے قومی اتحادی حکومت کے ساتھ تعاون کا اظہار کیا ہے۔

جرمنی کے وزیر خارجہ فرینک والٹر سٹین مئیر اور فرانس کے وزیر خارجہ جین مارک آئرو نے طرابلس میں بحری بیس میں موجود اور اقوام متحدہ کی نگرانی میں قائم ہونے والی حکومت کے وزیر اعظم فیض ایسیراک کے ساتھ ملاقات کی۔

ملاقات میں فیض ایسیراک نے دونوں وزراء سے لیبیا کی سکیورٹی فورسز کے لئے تربیت کا مطالبہ کیا ہے۔

توقع ہے کہ یہ تربیت پہلے مرحلے میں لیبیا سے باہر کسی مقام پر دی جائے گی۔

واضح رہے کہ 12 اپریل کو اٹلی کے وزیر خارجہ نے اور 14 اپریل کو برطانیہ، فرانس اور اسپین کے سفیروں نے طرابلس کا دورہ کیا اور قومی اتحادی حکومت کے ساتھ تعاون کا اظہار کیا تھا۔

واضح رہے کہ ایسیراک حکومت ابھی خود کو طبروق کی حکومت اور طرابلس کی حکومت سے قبول نہیں کروا سکی۔

طبروق پارلیمنٹ حکومت کو تسلیم کرنے کے موضوع پر رواں ہفتے میں غور کرے گی۔

تاہم طرابلس انتظامیہ کے وزیر اعظم خلیفہ گیویل نے کہا ہے کہ وہ نئی حکومت کو تسلیم نہیں کریں گے۔

توقع ہے کہ لیبیا میں قومی اتحادی حکومت ملک میں اختیار حاصل کرنے کے بعد دہشت گرد تنظیم داعش کے خلاف آپریشن شروع کرنے کے لئے مغربی ممالک سے مدد کی اپیل کرے گی۔



متعللقہ خبریں