ترکی کے اخبارات  کی جھلکیاں - 23.06.2022

ترک ذرائع ابلاغ

1847216
ترکی کے اخبارات  کی جھلکیاں  - 23.06.2022

آج کے ترکی کے اہم اخبارات  کی اہم  خبروں کے ساتھ حاضرِ خدمت ہیں ۔

 

***روزنامہ اسٹار "ترکی اور سعودی عرب کا مشترکہ بیان"

صدر رجب طیب ایردوان نے  ترکی کے دورے پر آنے والے  سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ملاقات کی ہے۔ ملاقات کے بعد جاری ہونے والے مشترکہ بیان میں دونوں ممالک کے درمیان سیاسی، اقتصادی، فوجی، سیکورٹی اور ثقافتی تعلقات سمیت دوطرفہ تعلقات میں تعاون کے نئے دور کے آغاز کے مشترکہ عزم پر زور دیا گیا ہے۔

 

***روزنامہ حریت: "آلتون: ترکی کو دہشت گردی پر قائل کرنے کی ضرورت ہے"

صدر کے اطلاعاتی امور کے ڈائریکٹر  فخر الدین آلتوں نے کہا ہے کہ نیٹو میں سویڈن کے داخلے کے لیے گرین لائٹ دینے کا مطلب یہ ہے کہ ہم حملے کی صورت میں سویڈن کے لوگوں کی حفاظت کا بیڑہ اٹھائیں گے۔ اگر ہم سویڈن کے لیے ایسی ذمہ داری قبول  کرتے ہیں تو  ترکی میں  دہشت گردانہ حملے نہیں کیے جانے چاہیں۔  سویڈن، شام یا عراق میں جمع کی گئی رقم سے ترک شہریوں کے خلاف کارروائی  نہیں کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں پختہ یقین رکھنے کی ضرورت ہے کہ سویڈش ہتھیار شام میں دہشت گردی کے بنکروں سے نہیں نکلیں گے۔

 

 

***روزنامہ  ینی  شفق :  "ترکی اور روس کے درمیان اہم سربراہی اجلاس: پہلا ٹھوس نتیجہ حاصل کیا گیا ہے"

یوکرین سے اناج سے لدے بحری جہازوں کے اخراج کے لیے کی جانے والی 'ریڈ لائن ڈپلومیسی' کے دائرہ کار  میں  ترکی اور روس کے فوجی وفود نے ماسکو میں ملاقات کی ہے۔ اجلاس کے پہلے  ٹھوس نتیجے کے طور پر  ترکی کا خشک کارگو جہاز یوکرین سے روانہ ہوگیا ہے ۔

 

***روزنامہ وطن:  "ترکی میں پہلا! ڈیٹا نے اپنا کام شروع کیا"

ترکی  میں  سب میرین ٹیسٹ انفراسٹرکچر (DATA)  پر عمل درآمد شروع کردیا گیا ہے۔ ایک ٹیسٹ پلیٹ فارم کے طور پر، DATA آبدوز کی ضرورت کے بغیر سب میرین گولہ باری اور ان کی نقل و حمل کی   جانچ پڑتال کر سکتا ہے۔ صنعت اور ٹیکنالوجی کے وزیر مصطفی ورانک نے کہا ہے کہ DATA اہم ہتھیاروں کی ترقی کے عمل کو تیز کرے گا۔

 

***روزنامہ صباح: "ترکی زرعی پیداوار میں یورپ میں پہلے نمبر پر ہے"

استنبول میں منعقدہ 8ویں ترک-عرب فوڈ اینڈ فوڈ ٹیکنالوجیز فیسٹویل  میں، زراعت اور جنگلات کے امور  کے  نائب وزیر ابو بکر گزلیگیدر  نے کہا ہے کہ ترکی زرعی پیداوار میں یورپ میں پہلے اور دنیا میں ٹاپ 10 میں ہے۔



متعللقہ خبریں