انقرہ سے 750 ٹن امدادی سامان لے جانے والی ٹرین افغانستان کے لیے روانہ

750 ٹن مواد لے جانے والی انسانی امدادی ٹرین کو روانہ کرنے کی تقریب میں وزیر داخلہ سلیمان سویئلو، وزیر ٹرانسپورٹ اور انفراسٹرکچر عادل قارا اسماعیل اولو  اور مذہبی امور کے سربراہ پروفیسر علی ایرباش  نے  شرکت کی

1769326
انقرہ سے 750 ٹن امدادی سامان لے جانے والی ٹرین افغانستان کے لیے روانہ
afganistan'a iyilik treni1.jpg
afganistan'a iyilik treni.jpg

افغانستان  کے لیے750 ٹن سامان لے کر  "گڈنیس ٹرین"  دارالحکومت انقرہ سے روانہ ہوگئی ہے۔

ڈیزاسٹر اینڈ ایمرجنسی منیجمنٹ پریذیڈنسی (AFAD) کے تعاون سے افغانستان کے لوگوں کے لیے 11 امدادی تنظیموں کے ذریعے اکٹھا کیا گیا 750 ٹن مواد لے جانے والی انسانی امدادی ٹرین کو روانہ کرنے کی تقریب میں وزیر داخلہ سلیمان سویئلو، وزیر ٹرانسپورٹ اور انفراسٹرکچر عادل قارا اسماعیل اولو  اور مذہبی امور کے سربراہ پروفیسر علی ایرباش  نے  شرکت کی۔ سے خطاب کرتے ہوئے  قارا اسماعیل اولو   نے  کہا کہ ترکی تمام مظلوموں اور ضرورتمندوں کے شانہ بشانہ  کھڑا ہے۔

قارا اسماعیل اولو   نے کہا کہ وہ ایک دوست اور برادر ملک افغانستان کے عوامکی ہر ممکنہ مدد کرتے رہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ "ہماری 2 ٹرینیں 47 ویگنوں پر مشتمل ہیں اور ان میں تقریباً 750 ٹن سامان لدا ہوا ہے  (ٹرینیں) 4,168 کلومیٹر کا سفر طے کریں گی۔ ایران ترکمانستان کے راستے افغانستان پہنچے گی۔

قارا اسماعیل اولو   نے کہا کہ  استنبول-تہران-اسلام آباد ٹرینیں، جنہیں باکو-تبلیسی-قارس لائن کے بعد جنوبی لائن کہا جاتا ہے، نے بھی کام کرنا شروع کر دیا ہے، قارا اسماعیل اولو  نے کہا کہ ٹرین 16 دنوں میں اس راہداری سے گزرے گی۔

وزیر داخلہ سوئیلو نے کہا کہ  افغانستان میں 12.9 ملین بچوں کو سرد موسمی حالات میں مدد کی ضرورت ہے اور کہا کہ ترکی، جو انسانیت کی خدمت جاری رکھے ہوئے  ہے    وہ دنیا بھر میں مشکل حالات میں گھرے ہوئے  لوگوں کی مدد کے لیے ان کے ساتھ کھڑا رہے گا۔

سویئلو نے کہا کہ ترک قوم مغربی تہذیب کی طرح اپنے ضمیر کی آواز پر خاموش رہنے والی  قوم نہیں ہے۔

 

 

 

 

 

 

 

 



متعللقہ خبریں