ہم مخالفین کی ملک واپسی کے خواہش مند ہیں: طالبان

آئیے مل کر اپنے ملک کی نشاۃ ثانیہ کا اور ملک کو درپیش مسائل کے حل کا راستہ تلاش کریں: شیر محمد عباس ستانکزئی

1740223
ہم مخالفین کی ملک واپسی کے خواہش مند ہیں: طالبان

افغانستان کی طالبان انتظامیہ نے بیرون ملک جانے والے مخالفین سے ملک واپس آنے کا مطالبہ کیا ہے۔

طالبان عبوری حکومت کے نائب وزیر خارجہ شیر محمد عباس ستانکزئی نے وزارت خارجہ میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب میں کہا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ طالبان کے حکومتی کنٹرول سنبھالنے کے بعد بیرونی ممالک جانے والے مخالفین اور سابقہ سرکاری ملازمین ملک واپس لوٹ آئیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ ملک واپسی پر انہیں کسی وزارت پر تعیناتی کی توقع نہیں رکھنی چاہیے۔ ہم ان کی واپسی کے اور اپنے ملک میں زندگی بسر کرنے کے خواہش مند ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ آئیے مل کر اپنے ملک کی نشاۃ ثانیہ کا اور ملک کو درپیش مسائل کے حل کا راستہ تلاش کریں۔

ستانکزئی نے کہا ہے کہ ماضی میں انہوں نے جو کچھ کیا ہے اس کا تعلق ان کے ماضی سے ہے کوئی بھی انہیں ملک سے نہیں نکالے گا۔ افغانستان تمام افغانوں کا مشترکہ ملک اور بین الاقوامی برادری کا ایک حصہ ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ہم کابل میں بند غیر ملکی سفارت خانوں کو دوبارہ کھولنے اور دنیا کے ساتھ تعلق قائم کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں۔

شیر محمد عباس ستانکزئی نے کہا ہے کہ طالبان عوام کا اعتماد حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں لہٰذا طالبان فورسز کو عوامی اقدار کے خلاف حرکت کرنے سے پرہیز کرنا چاہیے۔

واضح رہے کہ 15 اگست کو طالبان کے ملکی اقتدار سنبھالنے کے بعد سابقہ حکومت کے ملازمین کی اکثریت نے ملک کو ترک کر دیا تھا۔

 



متعللقہ خبریں