بھارت: اسرائیلی سفارت خانے کے قریب دھماکے کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے

دھماکہ، ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب اسلامی  سے منسلک قدس فورسز  کمانڈ آفس کی اسرائیل کے خلاف جاری "غیر متشکل جنگ"  کا ایک حصہ ہے: بھارت

1597229
بھارت: اسرائیلی سفارت خانے کے قریب دھماکے کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے

بھارت نے کہا ہے کہ نئی دہلی میں اسرائیلی سفارت خانے کے قریب دھماکے کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق بھارت  کے انسداد دہشتگردی کے اداروں  نے 29 جنوری کو نئی دہلی میں اسرائیلی سفارت خانے کے قریب کئے گئے بم دھماکے کے تحقیقی نتائج کا اعلان کر دیا ہے۔

بیان کے مطابق تفتیش سے ثابت ہوا ہے کہ دھماکے میں دیسی ساختہ بم کا استعمال کیا گیا۔ بم ریموٹ کنٹرول تھا اور اسے شعیوں کی طرف سے دھماکے کی جگہ نصب کیا گیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اندازے کے مطابق بم میں PETN اور ANFO دھماکہ خیز مواد کا استعمال کیا گیا  ہے لیکن اس بارے میں حتمی معلومات عدلیہ کی لیبارٹری رپورٹ کے بعد جاری کی جائیں گی۔

بیان میں مشتبہ افراد کی فہرست تیار کئے جانے کا ذکر کیا گیا اور کہا گیا ہے کہ حملے کی ذمہ داری داعش پر ڈالنے کے لئے بعض توجہ بھٹکانے کی کاروائیاں کی گئی ہیں۔لیکن  دھماکہ، ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب اسلامی  سے منسلک قدس فورسز  کمانڈ آفس کی اسرائیل کے خلاف جاری "غیر متشکل جنگ"  کا ایک حصہ ہے۔

بیان میں نام کو پوشیدہ رکھتے ہوئے رائے کا اظہار کرنے والے ایک ماہر امورِ دہشت گردی نے کہا ہے کہ " ایران، بھارت جیسے دوست ملک کے ساتھ تعلقات خراب نہیں کرنا چاہتا کہ بم کی شدت کو ہلکا رکھا گیا ہے اور کسی انسان کو ہدف نہیں بنایا گیا۔ لیکن اس دھماکے سے جو پیغام دیا گیا ہے وہ نہایت واضح اور خطرناک ہے"۔

واضح رہے کہ بھارت  میں 29 جنوری کو اسرائیل کے سفارت خانے کے جوار میں دھماکہ ہوا  تھا۔ دھماکے میں کوئی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا صرف ایک پارک حالت میں کھڑی گاڑی کو نقصان پہنچا تھا۔



متعللقہ خبریں