وزیر اعظم عمران خان آج چین کے تین روزہ دورے پر روانہ ہو رہے ہیں

وزیراعظم عمران خان حالیہ دورےمیں چینی صدر شی جن پنگ اورچینی ہم منصب لی کی چیانگ سےعلیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کریں گے۔علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان زرعی، صنعتی اورسماجی واقتصادی شعبوں میں تعاون کےعلاوہ پاک چین اقتصادی راہداری کےتحت منصوبوں تبادلہ خیال کریں گے

وزیر اعظم عمران خان آج چین کے تین روزہ دورے پر روانہ ہو رہے ہیں

وزیر اعظم عمران خان آج چین کے تین روزہ دورے پر روانہ ہونگے ، وفاقی وزرا شیخ رشید ، حماد اظہر ، خسرو بختیار اور حفیظ شیخ بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہونگے ، وزیر اعظم چینی قیادت کے ساتھ مسئلہ کشمیر پر بھی بات چیت کریں گے ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان آج سے چین کے تین روزہ دورے پر روانہ ہونگے ۔وفاقی وزرا شیخ رشید ، حماد اظہر ، خسرو بختیار اور حفیظ شیخ بھی دورہ چین کے دوران وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ ہونگے ۔ وزیر اعظم چینی قیادت کے ساتھ مسئلہ کشمیر سمیت اہم علاقائی معاملات پر بات چیت کریں گے ۔

 وزیراعظم عمران خان حالیہ دورے میں چینی صدر شی جن پنگ اور چینی ہم منصب لی کی چیانگ سے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کریں گے۔علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان زرعی، صنعتی اور سماجی و اقتصادی شعبوں میں تعاون کے علاوہ پاک چین اقتصادی راہداری ( سی پیک) کے تحت منصوبوں میں توسیع پر تبادلہ خیال کریں گے۔

 

وزیر اعظم عمران خان اپنے دورہ چین کے دوران پاکستان سٹیل کی حوالگی کے بارے میں بات کریں گے۔ ان کے دورے کے دوران کئی ارب ڈالر کے ریلوے کی مین لائن ون (ML-1) کے بارے میں بھی بات کی جائے گی۔

وزیر اعظم عمران خان اپنے دورہ چین کے دوران 5 معاملات اٹھائیں گے۔ وہ چین کو پاکستان سٹیل کی حوالگی کی بات کریں گے، ایم ایل ون کی ڈیل فائنل کریں گے، بونجی ہائیڈرو پاور پراجیکٹ میں سرمایہ کاری کی دعوت دیں گے اور زرعی اور سوشل سیکٹرز میں معاہدے کریں گے۔وزیر اعظم کے دورہ چین کے دوران اعلیٰ حکام یہ یقین دہانی کرائیں گے کہ سی پیک پر کام کی رفتار آہستہ نہیں ہونے دی جائے گی۔ چین کو یہ یقین دہانی بھی کرائی جائے گی کہ آئی ایم ایف کی سخت شرائط کے باوجود سی پیک کے اگلے مرحلے پر انتہائی تیزی کے ساتھ کام کیا جائے گا۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ دونوں ممالک کے سربراہان دو طرفہ کاروبار اور تجارت میں مزید اضافے کے لیے چین پاکستان آزادانہ تجارتی معاہدے کے دوسرے مرحلے کے فوری عملدرآمد پر تبادلہ خیال کریں گے۔وزیراعظم عمران خان اور چینی صدر تمام پاکستانی زرعی مصنوعات جیسا کہ چاول، گندم، مکئی، سویابین، چینی اورتمباکو کے کوٹے کے خاتمے پر غور کریں گے۔خیال رہے کہ یہ وزیراعظم عمران خان کا ایک سال میں چین کا تیسرا دورہ ہوگا، اس سے قبل انہوں نے رواں برس اپریل میں چین کا 4 روزہ سرکاری دورہ کیا تھا۔اس دوران عمران خان نے بیجنگ میں ’دوسرے ایک خطہ ایک شاہراہ فورم‘ میں شرکت کی تھی۔



متعللقہ خبریں